انسان بھی کیا چیز ہے۔۔۔

انسان بھی کیا چیز ہے۔۔۔

دولت کمانے کیلئے اپنی صحت کھو دیتا ہے 

پھر صحت کو واپس پانے کیلئے اپنی دولت کھوتا ہے 

مستقبل کا سوچ کر اپنا حال ضائع کرتا ہے 

پھر مستقبل میں اپنا ماضی یاد کر کے روتا ہے 

جیتا ایسے ہے جیسے کبھی مرے گا نہیں 

اور مر ایسے جاتا ہے جیسے کبھی جیا ہی نہیں تھا 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں