لوگ سمجھ میں آنے لگ جائیں تو

کچھ لوگوں کو اگر کبھی سمجھنے کی کوشش کرتے ہیں تو

اس چکر میں ہماری نظروں سے ہی نہیں بلکہ دل سے ہی  وہ لوگ اتر جاتے ہیں

اور پھر ایک ہی شعر میرے دل اور دماغ میں آتا ہے

نہ سمجھ ہی رہتے تو اچھا تھا

الجھنیں بڑھ گئی ہیں جب سے سمجھ دار ہو گئے ہین

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں