پاکستانی خبریں

محکمہ داخلہ حکومت بلوچستان نے لاپتہ افراد سے متعلق پارلیمانی کمیشن قائم کردیا

 محکمہ داخلہ بلوچستان نے کابینہ کی منظوری کے بعد لاپتہ افراد کے حوالے سے اعلیٰ اختیاراتی پارلیمانی کمیشن کے قیام کا نوٹی فکیشن جاری کردیا۔ محکمہ داخلہ اور قبائلی امور کی جانب سے لاپتہ افراد سے متعلق اعلیٰ اختیاراتی پارلیمانی کمیشن کے قیام کے پس منظر کے حوالے سے وضاحتی اعلامیہ جاری کیا گیا ہے۔

اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ بلوچستان ہائی کورٹ کے حکم پر لاپتہ افراد کیس میں 17 نومبر 2021 کو لاپتہ افراد کے حوالے سے کمیشن تشکیل دیا گیا، اعلیٰ اختیاراتی پارلیمانی کمیشن بلوچستان ٹریبونل آف انکوائری کمیشن 1969 کے سیکشن 3 کے تحت تشکیل دیا گیا ہے۔

بلوچستان حکومت کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق کمیشن کے قیام کا بنیادی مقصد ہر لاپتہ شخص کے کیس کا جائزہ لیکر اسکی بازیابی کی کوشش کرنا ہے جبکہ کمیشن لاپتہ افراد کے خاندانوں کی معاونت اور مدد کے لئے طریقہ کار بھی وضع کریگا، سوائے اُن لوگوں کے جو ریاست کے خلاف دہشت گردی کی کسی کارروائی میں ملوث ہوں۔

بلوچستان کابینہ نے مفقہ طور پر پارلیمانی کمیشن کے قیام کی منظوری دے دی جس کے بعد کمیشن کے قیام کا نوٹی فکیشن بھی جاری کردیا گیا، جس کے مطابق صوبائی وزیر داخلہ میر ضیا اللہ لانگو کمیشن کے سربراہ (چیئرمین) ہوں گے۔

 

Related Articles

Back to top button