سینیٹ انتخابات اوپن بیلٹ یا شو آف ہینڈ: صدر نے ریفرنس پر دستخط کردیئے

سینیٹ انتخابات اوپن بیلٹ یا شو آف ہینڈ: صدر نے ریفرنس پر دستخط کردیئے

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے سینیٹ انتخابات اوپن بیلٹ یا شو آف ہینڈ کے ذریعے کرانے کے ریفرنس پر دستخط کر دیئے ہیں۔ صدر نے آئین آرٹیکل 186 کے تحت سپریم کورٹ ریفرنس بھجوانے کی وزیرِاعظم کی تجویز منظور کر لی ہے۔صدرنےسینیٹ الیکشن اوپن بیلٹ یا شو آف ہینڈز کے ذریعے کرانے سےمتعلق سپریم کورٹ کی رائے مانگی ہے۔

وفاقی کابینہ پہلے ہی معاملے پر 15 دسمبر کو سپریم کورٹ سےرائےلینے کی منظوری دےچکی ہے۔

حکومت چاہتی ہے کہ سینیٹ کے آئندہ انتخابات شو آف ہینڈ سے کرائے جائیں۔ کابینہ کو آگاہ کیا گیا کہ آئین پاکستان میں اوپن بیلٹ کی بظاہر کوئی ممانعت نہیں ہے۔

سینیٹ کے انتخابات ’’شو آف ہینڈ‘ کے ذریعے فروری 2021 میں کرانے کیلئے حکومت اپنی قانونی ٹیم سے مشاورت شروع کر دی ہے۔

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ سینیٹ انتخابات میں مبینہ ہارس ٹریڈنگ کو روکنے کے لیے شو آف ہینڈ کا طریقہ اپنایا جا رہا ہے۔

قومی اسمبلی میں حزب اختلاف کی سب سے بڑی جماعت مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کا کہنا ہے کہ وہ شو آف ہینڈ کے خلاف نہیں لیکن جب چیئرمین سینیٹ کے الیکشن کو ہم نے چیلنج کیا تھا اس وقت حکومت کو شو آف ہینڈ کیوں یاد نہیں آیا اور اب جب اپنی حکومت جاتی نظر آرہی ہے تو شو آف ہینڈ یاد آگیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں