ننھی مروہ کی سسکیاں یقیناً ملزم کو جہنم واصل کریں گی، 5 روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے

ننھی مروہ قتل کیس میں عدالت نے مرکزی ملزم نواز کو پانچ روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا جبکہ پولیس نے ایف آئی آر میں قتل کی دفعات شامل کرلیں۔

کراچی کے علاقے پی آئی بی میں قتل ہونے والی پانچ سالہ مروہ کے قتل اور زیادتی میں ملوث ملزم نواز کو پولیس نے عدالت میں پیش کیا اور جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی۔

عدالت نے پانچ روزہ جسمانی ریمانڈ پر ملزم کو پولیس کے حوالے کردیا۔

دوسری جانب پولیس نے ننھی مروہ کیس کی ایف آئی آر میں قتل کی دفعات شامل کردی ہے۔

مزید پڑھیں: مروہ زیادتی اور قتل کیس: مشتبہ افراد کی جیوفینسگ جاری، ملزمان کی مختلف مقام پر موجودگی کا پتہ

گذشتہ رات مرکزی ملزم نواز کو گرفتار کیا گیا تھا ، پولیس کا کہنا تھا کہ ملزم کے گھر کا پردہ بھی کچرا کنڈی سے ملا ہے اور ملزم بچی کے گھر کے قریب ہی رہائش پذیر ہے۔

پولیس کاکہنا ہے کہ ننھی مروہ قتل کیس مقدمے میں انسداد دہشتگردی کی دفعہ شامل کرنے پر غور کیا جارہا ہے ، سنگین جرم ہے دہشتگردی کی دفعہ شامل ہونی چاہیے۔

پولیس کے مطابق نوازسمیت 20افراد کو حراست میں لےکرڈی این اے نمونےلیےگئے، سیمپل حاصل کرنے کےبعد اکثریت کورہا کردیا گیا ، ڈی این اے رپورٹس آنے کے بعد اصل مجرم سامنے آئےگا۔

واضح رہے کہ پی آئی بی کالونی کی رہائشی 5 سالہ بچی دو روز قبل گھر سے بسکٹ لینے نکلی تھی، مروہ اغوا کرلیا گیا تھا جس کی لاش دو روز بعد کچرا کنڈی سے برآمد ہوئی، بچی کی ہلاکت پر سوشل میڈیا پر ’جسٹس فار مروہ‘ کے نام سے ٹاپ ٹرینڈ بن گیا جس میں قاتلوں کی گرفتاری کا مطالبہ کیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں