پاکستانی خبریں

عام انتخابات کے پُرامن اور تشدد سے پاک انعقاد پر قوم کو دلی مبارکباد پیش کرتے ہیں: آئی ایس پی آر

پاک افواج نے عام انتخابات کے پُرامن انعقاد پر قوم کو مبارکباد پیش کی ہے۔ ترجمان پاک فوج کے مطابق 6000 انتہائی حساس پولنگ اسٹیشنوں پر 137000 فوجی اہلکاروں اور سول آرمڈ فورسز کی تعیناتی اور 7800 سے زیادہ کوئک رسپانس فورس کے دستوں کے ساتھ عوام کے لیے محفوظ ماحول کو یقینی بنایا گیا۔

آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ہم عام انتخابات کے پرامن اور تشدد سے پاک انعقاد پر قوم کو دلی مبارکباد پیش کرتے ہیں، قانون نافذ کرنے والے اداروں کے ساتھ مسلح افواج کو فخر ہے کہ انہوں نے مقدس انتخابی عمل کے انعقاد کے دوران سیکیورٹی فراہم اور سول اداروں کی مدد کی اورآئین پاکستان کے مطابق اہم کردار ادا کیا۔

ترجمان پاک فوج کے مطابق 6000 انتہائی حساس پولنگ اسٹیشنوں پر 137000 فوجی اہلکاروں اور سول آرمڈ فورسز کی تعیناتی اور 7800 سے زیادہ کوئک رسپانس فورس کے دستوں کے ساتھ عوام کے لیے محفوظ ماحول کو یقینی بنایا گیا۔

51 بزدلانہ دہشت گردانہ حملوں کے باوجود، جو زیادہ تر کے پی اور بلوچستان میں ہوئے، جن کا مقصد انتخابی عمل کو متاثر کرنا تھا، سیکیورٹی اہلکار پرعزم رہے، ان حملوں میں 12 افراد (جن میں سیکیورٹی فورسز اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے 10 اہلکار شامل ہیں) نے شہادت قبول کی 39 دیگر زخمی ہوئے جبکہ مختلف کارروائیوں کے دوران 5 دہشت گرد بھی مارے گئے۔

ترجمان پاک فوج کا کہنا ہے کہ پورے پاکستان میں امن و سلامتی کو مؤثر طریقے سے یقینی بنایا گیا، فعال انٹیلی جنس اور فوری کارروائی کے ذریعے بہت سے ممکنہ خطرات کو بے اثر کر دیا گیا جو ہمارے شہریوں کے جمہوری حقوق کے تحفظ کے لیے ہماری سیکیورٹی ایجنسیوں کے غیر متزلزل عزم کو ظاہر کرتا ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق قانون نافذ کرنے والے دیگر اداروں کا شکریہ ادا کرتے ہیں جنہوں نے جمہوری عمل کی حفاظت کے لیے مسلح افواج کے ساتھ مل کر کام کیا، ہمیں پوری امید ہے کہ ہماری قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی اور یہ الیکشن پاکستان میں جمہوریت کو مزید مضبوط کرنے اور عوام کی امنگوں کو پورا کرنے کی راہ ہموار کرے گا۔

ترجمان پاک فوج کا کہنا ہے کہ مسلح افواج ملک میں امن و سلامتی کو برقرار رکھنے کے لیے پرعزم ہیں، اور ریاست کی جمہوری روایات کے تحفظ کے لیے غیر متزلزل حمایت فراہم کرنے کے لیے تیار ہیں۔

Related Articles

Back to top button