اے خاصۂ خاصانِ رسل وقت دعا ہے

اے خاصۂ خاصانِ رسل وقت دعا ہے

امت پہ تیری آکے عجب وقت پڑا ہے

جو دین بڑی شان سے نکلا تھا وطن سے

پر دیس  میں  وہ  آج  غریب  الغرباء  ہے

فریاد  ہے  اے کشتی  امت  کے  نگہباں

بیڑا  یہ  تباہی  کے  قریب  آن  لگا  ہے

اے  چشمہ  زمت  بابی  انت  و  امی

دنیا  پہ  تیرا  لطف  سدا عام رہا  ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں