16 سال کی عمر میں پاکستانی نوجوان نے نیوٹن کا ریکارڈ توڑدیا، دنیا حیران

محمد شہیر نیازی کا تحقیقاتی جرنل 16 سال کی عمر میں رائل سوسائٹی اوپن سائنس جریدہ میں شائع ہوا ہے جبکہ نیوٹن کا اسی جریدے میں جرنل 17 سال کی عمر میں شائع ہوا تھا

دنیا تیز رفتاری سے ترقی کی طرف جا رہی ہے۔ گزرتے وقت کے ساتھ ساتھ ٹیکنالوجی میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔ ٹیکنالوجی میں اضافے کے ساتھ ساتھ اس کو استعمال کرنے والے اور ایجاد کرنے والے لوگ بھی اپنی مہارتوں سے دنیا کو حیران کر رہے ہیں۔ کچھ ایسا ہی کارنامہ سرانجام دیا ہے ایک 16 سال کے محمد شہیر نیازی نے۔

نوجوان نے 16 سال کی عمر میں اپنا تحقیقاتی جرنل رائل سوسائٹی اوپن سائنس جریدے میں شائع کروایا ہے جبکہ اسی جریدے میں نیوٹن کا جرنل 17 سال کی عمر میں شائع ہوا تھا۔ اس بارے میں بات کرتے ہوئے پاکستانی نوجوان محمد شہیر نیازی نے بتایا ہے کہ اسے اس جرنل کے بعد اس سے نیویارک ٹائمز کے صحافیوں نے بھی رابطہ کیا جو اس کے لئے ایک بہت حیران کن اور اعزاز والی بات تھی۔

اس بارے میں مزید بات کرتے ہوئے محمد شہیر نیازی کا کہنا تھا کہ یہ ایک بہت چھوٹی سی چیز تھی ، اور اس پر صرف چار سے پانچ تحقیقی مقالے لکھے گئے تھے ، لہذا میں نے نہیں سوچا کہ اس کو اتنی تشہیر ہوگی۔ اپنے عزائم کا ذکر کرتے ہوئے محمد شہیر نیازی کا کہنا تھا کہ اس کا مقصد پاکستان کو فزکس میں نوبل انعام سے نوازنا ہے۔

خیال رہے کہ محمد شہیر نیازی نے ایک ایسا راستہ دریافت کیا ہے جس کی مدد سے وہ آئنز کی نقل و حرکت کا اندازہ اس وقت لگا سکتا ہے جب وہ بجلی سے لگائے جانے والے ذرات تیل کے تالاب میں سے گزرنے کی کوشش کرتے ہیں اور شہد کی مکھی کی شکل اختیار کرتے ہیں۔

یاد رہے کہ شہیر کی عمر صرف 16 سال ہے جس میں اس نے تحقیقاتی جرنل رائل سوسائٹی اوپن سائنس جریدے میں شائع کروایا ہے جبکہ اسی جریدے میں نیوٹن کا جرنل 17 سال کی عمر میں شائع ہوا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں