کھیلوں کی خبریں

ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ؛ کپتان بابراعظم ٹیم کی اچھی کارکردگی کیلئے پرعزم

پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان بابراعظم ٹی ٹوئنٹی طرز میں ٹیم کی حالیہ کارکردگی کے پیش نظر ورلڈ کپ ٹی ٹوئنٹی میں پاکستان کی کامیابی کے حوالے سے پرعزم ہیں۔

بابر اعظم نے کہا کہ ‘ورلڈ کپ کے لیے ہماری تیاریاں جتنا ممکن ہو بہترین ہوں گی، میگاایونٹ سے قبل نیوزی لینڈ کے خلاف 5 اور انگلینڈ کے خلاف دو میچ کھیلیں گے، جو ہمارے لیے مفید ہوں گے’۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘اعداد وشمار بتا رہے ہیں کہ ہم نے 31 میں سے 21 میچوں میں کامیابی حاصل کی اور یہ اس بات کا اشارہ ہے کہ ہمارے اعتماد کی سطح اونچی ہے’۔

ٹی ٹوئنٹی کی عالمی رینکنگ میں پہلے نمبر پر موجود قومی ٹیم کے کپتان نے کہا کہ ‘ہم متحدہ عرب امارات کے حالات کے عادی ہیں کیونکہ ہم نے ان پچز میں بہت کرکٹ کھیلی ہے اور یہ خوش قسمت مقام بھی رہا ہے جہاں پاکستان ٹی ٹوئنٹی کی نمبرایک ٹیم بن گئی تھی’۔

خیال رہے کہ ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ اکتوبر میں متحدہ عرب امارات میں کھیلا جائے گا جہاں پاکستان گروپ ٹو میں اپنا پہلا میچ بھارت کے خلاف 24 اکتوبر کو کھیلے گا۔

بابراعظم نے کہا کہ ‘نیوزی لینڈ کے خلاف 3 ایک روزہ اور ٹی ٹوئنٹی سیریز ہمارے لیے بطور ٹیم نہایت اہم ہوگی کیونکہ ورلڈ کپ سے قبل یہ ایک قسم تیاری ہوگی’۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘گوکہ پاکستان کے لیے یہ اچھا ہوگا کہ نیوزی لینڈ کی تجربہ کار ٹیم کا سامنا کرنا پڑے، دنیا کی بہترین ٹیموں میں سے ایک کے خلاف ہماری اچھی تیاری ہوگی، جو ورلڈ کپ بھی کھیلے گی’۔

انہوں نے کہا کہ ‘ہماری توجہ اس بات پر ہے کہ پاکستان جیت کے تسلسل کے ساتھ متحدہ عرب امارات جائے’۔

ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں قومی کپتان اپنے نائب محمد رضوان کے ساتھ بننے والی کامیاب اوپننگ جوڑی سے امیدیں وابستہ کیے ہیں اور کہا کہ ‘تقریباً ایک سال سے رضوان میرے ساتھ اننگز کا آغاز کر رہا ہے جو شان دار شراکت داری ہے’۔

انہوں نے کہا کہ ‘بحیثیت کپتان میری خواہش ہوتی ہے کہ ہم پاکستان کو جتنا مکن ہو معقول آغاز فراہم کریں خاص کر ورلڈ کپ کے دوران زیادہ اہم ہے’۔

بابراعظم کا کہنا تھا کہ ‘ٹاپ آرڈر کی جانب سے رنز بننا ٹی ٹوئنٹی میں نہایت اہم ہوتا ہے اور بطور کپتان میں چاہتا ہوں کہ ہم میں سے ایک کو اننگز میں جارحانہ آغاز کے ساتھ طویل بیٹنگ کرنی چاہیے اور تسلسل ختم نہ کرنے کو یقینی بنایا جائے’۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘ہمیں فیلڈنگ میں بہت زیادہ بہتری کی ضرورت ہے، اگر ہماری فیلڈنگ خراب ہوگی تو جیت کی امید نہیں لگائی جاسکتی کیونکہ اچھی ٹیمیں اس سے فائدہ اٹھانے کا موقع پاتی ہیں’۔

بابراعظم نے کھلاڑیوں کو کووڈ-19 سے متعلق احتیاط کو بھی ملحوظ خاطر رکھنے پر زور دیا تاہم ان کا کہنا تھا کہ عالمی وبا گزشتہ دوسال کے دوران کھلاڑیوں کے لیے بڑا امتحان ہے۔

Related Articles

Back to top button