کھیلوں کی خبریں

راج مستری کے بیٹے کا اولمپکس تک کا سفر

 پاکستان کے 24 سالہ ایتھلیٹ ارشد ندیم چار اگست کو ٹوکیو اولمپکس کے جیولن تھرو ایونٹ کے کوالیفائنگ مقابلوں میں حصہ لیں گے جن میں کامیابی اُنھیں سات اگست کو ہونے والے حتمی مقابلوں تک لے جائے گی۔

ارشد ندیم اولمپکس کی تاریخ میں پہلے پاکستانی ایتھلیٹ ہیں جنھوں نے کسی ’انویٹیشن کوٹے‘ یا وائلڈ کارڈ کے بجائے اپنی کارکردگی کی بنیاد پر اولمپکس کے لیے براہ راست کوالیفائی کیا ہے۔

ارشد ندیم نے سنہ 2019 میں نیپال کے شہر کٹھمنڈو میں ہونے والے ساؤتھ ایشین گیمز میں 86 اعشاریہ 29 میٹرز دور نیزہ پھینک کر نہ صرف ساؤتھ ایشین گیمز کا نیا ریکارڈ قائم کیا تھا بلکہ اس کارکردگی کے بل پر وہ براہ راست ٹوکیو اولمپکس کے لیے کوالیفائی کرنے میں بھی کامیاب ہو گئے تھے

Related Articles

Back to top button