پی سی بی کا زمبابوے کے خلاف سیریز کیلئے نیا شیڈول

پاکستان کرکٹ بورڈ نے زمبابوے کے خلاف 3 ون ڈے اور 3 ٹی ٹوئنٹی میچوں پر مشتمل سیریز کے لیے نیا شیڈول جاری کردیا۔

پی سی بی سے جاری اعلامیے کے مطابق ‘آئی سی سی مینز کرکٹ ورلڈ کپ سپر لیگ میں پاکستان اپنے سفر کا آغاز راولپنڈی سے کرے گا جہاں زمبابوے کے خلاف 3 ون ڈے میچ کھیلے جائیں گے’۔

خیال رہے کہ اس سے قبل زمبابوے کے خلاف سیریز کے ابتدائی تینوں ون ڈے ملتان میں شیڈول تھے تاہم پی سی بی کے مطابق لاجسٹک اور آپریشنل وجوہات کے باعث میچز راولپنڈی منتقل کر دیے گئے۔

 

پی سی بی نے راولپنڈی میں شیڈول تمام ٹی ٹوئنٹی میچ قذافی اسٹیڈیم لاہور منتقل کردیے ہے جہاں 7 نومبر کو پہلا میچ ہوگا جس کے بعد دوسرا میچ 8 اور تیسرا میچ 10 نومبر کو کھیلا جائے گا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے ڈائریکٹر انٹرنیشنل کرکٹ ذاکر خان کا کہنا تھا کہ ‘لاجسٹک اور آپریشنل وجوہات کے سبب ملتان اسٹیڈیم دستیاب نہیں تھا اس لیے شیڈول دوبارہ ترتیب دیا گیا جو دونوں ٹیموں، میچ انتظامیہ، براڈ کاسٹرز اور دیگر متعلقہ حکام کے لیے موزوں ہے’۔

ذاکر خان کا کہنا تھا کہ ‘ہم نومبر میں لاہور میں متوقع اسموگ سے متعلق محکمہ موسمیات سے مسلسل رابطے میں رہیں گے اور اگر اس دوران تبدیلی کی ضرورت پیش آئی تو غور کیا جائے گا’۔

انہوں نے کہا کہ ‘راولپنڈی کی دستیابی سے واضح ہوتا ہے کہ ورلڈ کپ سپر لیگ کے میچوں کے انعقاد سے متعلق کوئی غیر یقینی نہیں اور پاکستان فاتحانہ آغاز کے ساتھ زیادہ سے زیادہ پوائنٹس حاصل کرنے کی کوشش کرے گا’۔

زمبابوے کے دورہ پاکستان کا نیا شیڈول

نئے شیڈول کے مطابق زمبابوے کی ٹیم 20 اکتوبر کو اسلام آباد پہنچے گی تاہم 21 اکتوبر سے 27 اکتوبر تک قرنطینہ میں چلی جائے گی اور اس دوران پریکٹس بھی جاری رکھے گی۔

مہمان ٹیم قرنطینہ کا مدت پورا ہوتے ہیں 28 اکتوبر سے 29 اکتوبر پر پنڈی کرکٹ اسٹیڈیم میں پریکٹس کرے گی۔

دونوں ٹیموں کے درمیان پہلا ٹی ٹوئنٹی 30 اکتوبر کو کھیلا جائے گا، دوسرا ٹی ٹوئنٹی یکم نومبر، تیسرا اور آخری ٹی ٹوئنٹی 3 نومبر کو ہوگا۔

زمبابوے کی ٹیم 4 نومبر کو لاہور روانہ ہوگی جہاں 5 نومبر اور 6 نومبر کر پریکٹس کرے گی اور 7 نومبر کو پہلا ون ڈے میچ کھیلا جائے گا۔

سیریز کا دوسرا ایک روزہ میچ 8 نومبر، تیسرا اور آخری ایک روزی میچ 10 نومبر کو کھیلا جائے گا۔

زمبابوے کی ٹیم سیریز مکمل ہونے کے بعد 12 نومبر کو واپس ہرارے روانہ ہوگی۔

یاد رہے کہ زمبابوے کی ٹیم نے 2015 میں اس وقت پاکستان کا دورہ کیا تھا جب دنیا کی کوئی ٹیم دورے کے لیے تیار نہیں تھی۔

زمبابوے نے 2015 میں لاہور میں 3 ایک روزہ اور 2 ٹی ٹوئنٹی میچ کھیلے جس کے بعد سری لنکا، بنگلہ دیش اور ایم سی سی کرکٹ ٹیم نے بھی پاکستان کا دورہ کیا اور سیریز کھیلی گئی۔

پی سی بی نے پاکستان سپرلیگ (پی ایس ایل) کے ابتدائی برسوں میں فائنل اور سیمی فائنل پاکستان میں منعقد کیے جبکہ رواں برس پی ایس ایل کے تمام میچ پاکستان میں کھیلے گئے۔

پی ایس ایل 2020 کورونا وائرس کے باعث مکمل نہیں ہوسکی تھی اور اب پی سی بی نے 14، 15 اور 17 نومبر کو لاہور میں بقیہ میچز رکھے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں