پاکستان میں کرکٹ کھیلنےکے عوض بنگلہ دیش کو کیا دیا؟ سابق پاکستانی کپتان نے سنسنی خیز انکشاف کر دیا

گزشتہ روز بنگلہ دیش نے پاکستان میں ٹیسٹ سیریز کھیلنے پر ضامندی ظاہر کر دی ہے اور شیڈول بھی طے پا گیاہے تاہم اس بڑی خوشخبری کے دوران سابق کپتان راشد لطیف نے سوشل میڈیا پر ایسا پیغام جاری کر دیا کہ اب نئی بحث شروع ہو گئی ہے جس نے ہر کسی کو ورطہ حیرت میں مبتلا کر دیاہے…

تفصیلات کے مطابق سابق کپتان نے راشد لطیف نے سوالیہ انداز میں ایشیا کپ 2020 کی میزبانی بنگلہ دیش کو دیئے جانے کا خدشہ ظاہر کر دیاہے ۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ گذشتہ سال مئی میں ہونے والے اے سی ای کے اجلاس میں ایشیا کپ کی میزبانی پاکستان کو سونپنے کے فیصلے کی توثیق کردی گئی تھی، اس پر بھارت کی جانب سے تحفظات کا اظہار کیا جاتا رہا ہے۔

گزشتہ روز بنگلہ دیش نے پاکستان میں ٹیسٹ سیریز کھیلنے پر رضامندی ظاہر کی اور شیڈول بھی طے پا گیا تاہم ایسی صورتحال میں اچانک ہاں کے بعد راشد لطیف کے معنی خیز ٹویٹ نے سوشل میڈیا پر نئی بحث چھیڑ دی ہے ۔

ٹویٹر پر صارف کامران مظفر نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ” اگر ایسا ہوا ہے تو پھر یہ گھاٹے کا سودا نہیں ، اگر پاکستان کو بنگلہ دیش کے مکمل ٹور اور بھارتی ٹیم کے بغیر ایشیا کپ میں سے کسی ایک کا انتخاب کرنا ہو تو جو ہور رہاہے اسے ہونے دینا چاہیے ،2018 میں بھارت نے ایشیا کپ کی میزبانی متحدہ عرب امارات میں کی تھی ، پاکستان بھی بالکل ایسا ہی بنگلہ دیش میں کر سکتا ہے ۔“

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں