پی ایس ایل فرنچائزز نے اگلے سیزن کی بینک گارنٹی جمع کرانے سے انکار

 پی ایس ایل کی فرنچائزز معاہدے کے تحت پاکستان کرکٹ بورڈنے بینک گارنٹی کیلیے خطوط ارسال کیے گئے ہیں تاہم فرنچائزنے بینک گارنٹی جمع کروانے سے انکار کردیا ہے۔ فرنچائزمالکان کا کہنا ہے کہ جب تک انھیں پی ایس ایل 04 کےمنعقدہ ایڈیشن کے حتمی حسابات نہیں دیے جاتے وہ بینک گارنٹی جمع نہیں کرائیں گے۔

معاہدے کے تحت فرنچائزز کو ایک سال پہلے ہی اگلے ایڈیشن کی بینک گارنٹی جمع کرانا پڑتی تھی مگر پی سی بی نے گذشتہ برس اسے 6 ماہ کردیا تھا، البتہ اب چند ماہ قبل ہی بینک گارنٹی کیلیے خطوط ارسال کرنا شروع کر دیے گئے۔

گزشتہ دنوں لاہور میں چیئرمین بورڈ احسان مانی سے ملاقات کے موقع پر فرنچائزز کا کہنا تھا کہ اب لیگ مستحکم ہو چکی لہذا بینک گارنٹی کا سلسلہ ختم کر دیا جائے،حکام اس بات سے متفق بھی نظر آئے مگر اب پیچھے ہٹ گئے ہیں، عموماً بعض فرنچائزز بورڈ کو فیس کے حوالے سے ہر سال ہی پریشان کرتی ہیں، ماضی میں چند بینک  کی گارنٹی کیش بھی کرائی جا چکی، اس لیے بورڈ کوئی خطرہ مول لینے کو تیار نہیں ہیں۔

پی سی بی کی جانب سے مسلسل اصرار پر اب مالکان نے واضح کر دیا کہ جب تک انھیں رواں برس منعقدہ ایڈیشن کے حتمی حسابات نہیں دیے جاتے وہ بینک گارنٹی جمع نہیں کرائیں گے۔

واضح رہے کہ پی ایس ایل فور کا فائنل15 مارچ کونیشنل اسٹیڈیم کراچی میں کھیلا گیا تھا، مگر تقریباً 6ماہ گذرنے کے باوجود اکاؤنٹس کو حتمی شکل نہیں دی جا سکی ہے۔

دوسری جانب لاہور کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا تھا کہ فرنچائز اور بورڈ آفیشلز پر مشتمل ورکنگ گروپس بنائے جائیں گے، ان کی تجاویز گورننگ کونسل میٹنگ میں زیرغور آئیں گی، مگر تاحال ان گروپس کی میٹنگز میں کوئی پیش رفت نہیں ہوسکی ،پی ایس ایل کے معاملات پر ایک جمود سا طاری ہے، اب تک پی سی بی کی نئی انتظامیہ نے لیگ کو زیادہ لفٹ نہیں کرائی۔

 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں