صلاح الدین کیس: ڈی پی او کو عہدے سےفارغ، جوڈیشل کمیشن بنانے کا حکم

وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے ڈسٹرکٹ پولیس افسر (ڈی پی او) رحیم یار خان کو عہدے سے ہٹا دیا۔

ذرائع کے مطابق پولیس حراست میں جاں بحق ہونے والے صلاح الدین کیس میں ڈی پی او رحیم یار خان عمر فاروق سلامت کو معطل کیا گیا۔

دوسری جانب وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے جوڈیشل کمیشن کے لیے لاہور ہائی کورٹ کو بھی خط لکھ دیا۔ عدالت سے رابطہ کرنے کا فیصلہ صلاح الدین کیس میں نئے شواہد سامنے آنے پر کیا گیا۔

واضح رہے کہ پولیس نے صلاح الدین کو اے ٹی ایم توڑنے کے الزام میں گرفتار کیا تھا جو 31 اگست کی شب پولیس حراست میں دم توڑ گیا۔ صلاح الدین کے جسم پر تشدد ثابت ہونے کے بعد ایس ایچ او، تفتیشی افسر اور اے ایس آئی سمیت دیگر افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا تھا۔

ڈی پی او رحیم یار خان نے واقعہ کی تحقیقات کے لیے ایس پی انویسٹی گیشن کی سربراہی میں ٹیم بھی تشکیل دی تھی۔

ابتدا میں پولیس صلاح الدین پر تشدد کے الزام کو مسترد کرتی رہی بعد ازاں پوسٹ مارٹم رپورٹ کے بعد آر پی او بہاولپور نے بیان دیا کہ مقتول کے جسم پر تشدد کے کچھ نشانات پائے گئے ہیں۔
واقعے پر وزیر اعلیٰ پنجاب اور آئی جی پنجاب نے نوٹس لیا تھا۔ مقدمہ میں گرفتار تینوں پولیس افسران نے گزشتہ روز عدالت سے 13 ستمبر تک عبوری ضمانت حاصل کر لی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں