پاکستانی خبریں

کابل میں پاکستانی سفارت خانے پر حملہ، عملہ واپس طلب

افغانستان کے دارالحکومت کابل میں پاکستانی سفارتی حکام پر فائرنگ کا واقعہ پیش آیا ہے۔

سفارتی ذرائع کے مطابق فائرنگ اس وقت ہوئی جب ناظم الامور چہل قدمی کر رہے تھے، گولی لگنے سے پاکستانی ناظم الامور کا گارڈ زخمی ہوگیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ گارڈ کو سینے میں تین گولیاں لگی ہیں اور اسے اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔

سفارتی ذرائع نے بتایا کہ پاکستانی سفارتخانے میں چھٹی کے باعث رش نہیں تھا۔

سفارتی ذرائع کے مطابق ناظم الامور اور دیگر حکام کو وقتی طور پر پاکستان واپس بلایا جارہا ہے۔

وزیراعظم کا حملے کے ذمہ داروں کے خلاف فوری تحقیقات اور کارروائی کا مطالبہ
دوسری جانب وزیراعظم شہبازشریف نے کابل میں پاکستانی ہیڈ آف مشن پر قاتلانہ حملے کی مذمت کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ جرات مند سکیورٹی گارڈ کو سلام جس نے ان کی جان بچانے کیلئے گولی کھائی، سکیورٹی گارڈ کی جلد صحت یابی کیلئے دعا گو ہیں۔

وزیراعظم نے حملے کے ذمہ داروں کے خلاف فوری تحقیقات اور کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

Related Articles

Back to top button