پاکستانی خبریں

منی لانڈرنگ کیس میں مطلوب ملزم کی سہولت کاری, ایف آئی اے کے سابق ڈی جی کی 15روزہ حفاظتی ضمانت منظور

سندھ ہائی کورٹ نے منی لانڈرنگ میں مطلوب ملزم کی سہولت کاری کےکیس میں وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) کے سابق ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی) بشیر میمن کی 15روزہ حفاظتی ضمانت منظور کرلی۔

سندھ ہائی کورٹ میں منی لانڈرنگ کے الزام میں مطلوب ملزم کی سہولت کاری سے متعلق کیس میں سابق ڈی آئی جی ایف آئی بشیر میمن کی حفاظتی ضمانت کی درخواست کی سماعت ہوئی۔

عدالت نے بشیر میمن کی 15 دن کے لیے حفاطتی ضمانت منظور کرتے ہوئے 15 دن میں متعلقہ عدالت سے رجوع کرنےکا حکم دے دیا۔

بشیر میمن کے وکیل نے مؤقف اختیار کیا تھا کہ بشیر میمن متعلقہ عدالت میں پیش ہونا چاہتے ہیں مگر گرفتاری کرنے کا خدشہ ہے، بشیر میمن کو سیاسی بنیادوں پر جھوٹے الزامات میں ملوث کیا گیا ہے ۔

خیال رہےکہ ایف آئی اے نے بشیرمیمن کو پوچھ گچھ کے لیے آج لاہور طلب کیا تھا، ایف آئی اے حکام کا کہنا ہےکہ بشیر میمن پر ملزم عمرفاروق ظہورکا نام ریڈنوٹس سے نکلوانے سمیت متعدد الزامات ہیں۔

ایف آئی اے حکام کا کہنا ہےکہ بشیر میمن بتائیں کہ ملزم عمر فاروق ظہور سے تعلقات کی کیا نوعیت ہے؟ ملزم سے تعلقات کب سے ہیں ؟ اور کتنی نجی ملاقاتیں ہوئیں؟

رپورٹ کے مطابق ملزم عمر فاروق ظہور سوئٹزرلینڈ، ناروے اور ترکی سمیت متعدد ممالک کو مطلوب ہے۔

بشیر میمن کا مؤقف ہے کہ ایف آئی اے اُن سے وہ دستاویزات مانگ رہا ہے جو اُن کی تحویل میں نہیں ہیں،ملزم عمر فاروق ظہور کا نام ریڈ نوٹس سے نکلوانے کا انٹر پول کا اپنا طریقہ کار ہے، ملزم کا نام ریڈ نوٹس سے نکلوانے کا الزام قانون سے نا واقفیت کا نتیجہ ہے۔

Related Articles

Back to top button