پاکستانی خبریں

مختصر وقت میں او آئی سی وزرائے خارجہ کو اکٹھا کرنا بڑی بات ہے: وزیر اعظم

وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ملک کا تشخص بہتر بنانے کی کوشش کریں گے۔

وزیر اعظم عمران خان نے وزارت خارجہ کی تقریب میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ او آئی سی کامیاب کانفرنس پر مبارکباد پیش کرتا ہوں اور مختصر وقت میں وزرائے خارجہ کو اکٹھا کرنا بڑی بات ہے۔

انہوں نے کہا کہ ماضی میں حکمرانوں کی ترجیح عوام نہیں بلکہ ڈالرز تھے اور ہماری اپنی غلطیوں کی وجہ سے ملک نیچے جاتا رہا۔ ایک وقت تھا پاکستان کا وزیر اعظم امریکہ جاتا تو امریکی صدر استقبال کرتا تھا۔

عمران خان نے کہا کہ ملک میں ماضی میں غلط فیصلے کیے گئے جس کا نقصان ہوا۔ ہم نے پاکستان کا بہترین تشخص دیکھا ہے تاہم انسانی زندگی میں اونچ نیچ آتی رہتی ہے۔ کامیابی ٹیم ورک سے ملتی ہے اور ہم نے ہر معاملے میں بہترین کام کرنا ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ اصولوں سے ہٹ کر فیصلے کیے جائیں تو نقصانات ہوتے ہیں۔ تاہم ہمیں کسی کو قصور وار ٹھہرانے کے بجائے درست فیصلے کرنے چاہیئیں۔ ہم نے مشکل وقت دیکھا اور حکمت عملی بنا کر نمٹنے کی کوشش کی جبکہ دنیا نے کورونا سے نمٹنے کے لیے ہمارے اقدامات کی تعریف کی۔

وزیر اعظم نے کہا کہ او آئی سی کانفرنس کا مقصد دنیا کو بتانا تھا کہ ہم تنہا بوجھ نہیں اٹھا سکتے اور افغانوں کی جلد از جلد امداد کی جائے۔ دنیا افغانستان کے حوالے سے ہمارے مؤقف کی تائید کر رہی ہے۔

افغانستان کے معاملے پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ افغانستان میں بحران پیدا ہو رہا ہے جو بڑا ظلم ہے جبکہ پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں مالی اور جانی قربانیاں دیں اور مشکلات کے باوجود ملک کا مثبت چہرہ دنیا میں ابھرا۔ افغانستان میں حکومت کسی کو پسند نہ ہو لیکن وہاں انسان بستے ہیں۔

Related Articles

Back to top button