پاکستانی خبریں

خیبرپختونخوا میں بلدیاتی انتخابات، ڈیرہ اسمٰعیل خان میں اے این پی امیدوار کا قتل

خیبرپختونخوا (کےپی) میں شیڈول بلدیاتی انتخابات سے قبل ہی ڈیراسمٰعیل خان میں عوامی نیشنل پارٹی (اےاین پی) کے میئر کے امیدوار عمر خطاب شیرانی کو قتل کردیا گیا۔

پولیس کے مطابق عمر خطاب شیرانی پر ماڈل ٹاؤن تھانے کی حدود میں ان کی رہائش گاہ کے باہر نامعلوم حملہ آوروں نےفائرنگ کی اور وہ موقع پر دم توڑ گئے۔

ڈیرہ اسمٰعیل خان کے ڈسٹرکٹ پولیس افسر نجم الحسنین نے واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے میڈیا کو بتایا کہ پولیس نے معاملے کی تفتیش کا آغاز کردیا ہے اور عمر خطاب کے قاتلوں کی گرفتاری کے لیے سرچ آپریشن بھی شروع کردیا گیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس وقت قتل کے پیچھے کون ہے، یہ بتانا قبل از وقت ہوگا۔

عمر خطاب شیرانی کے قتل کےواقعے کے فوری بعد ان کے رشتہ دار اور اے این پی کے کارکنان کی بڑی تعداد ان کے گھر کے باہر جمع ہوگئے اور قتل کےخلاف احتجاج کیا۔

بعد ازاں نے میت کےساتھ ساؤتھ سرکیولر روڈ پر احتجاج کیا اور کئی گھنٹوں پر ٹریفک معطل ہوگئی۔

مقامی انتظامیہ کے ساتھ مذاکرات کے بعد احتجاج ختم کردیا گیا۔

عمر خطاب شیرانی کی نماز جنازہ مقامی کالج کے گراؤنڈ میں ادا کی گئی، جس میں وفاقی وزیر امور کشمیر علی امین گنڈا پور، اے این پی کے کارکنان اور دیگر افراد نے شرکت کی۔

مقتول کو ان کے آبائی علاقے میں سپرد خاک کردیا گیا۔

الیکشن کمیشن (ای سی پی) نے اے این پی کے میئر کے امیدوار کےقتل کےواقعے کےبعد ڈیرہ اسمٰعیل خان کے لیے شیڈول انتخاب ملتوی کردیا۔

ای سی پی سےجاری نوٹیفکیشن کے مطابق ڈیرا اسمٰعیل خان میں صرف سٹی مئیر کا انتخاب ملتوی کردیا گیا جبکہ دیگر نشستوں کے لیے انتخابات شیڈول کے مطابق ہوں گے۔

Related Articles

Back to top button