پاکستانی خبریں

سپریم کورٹ کا متروکہ وقف املاک کی غیر قانونی فروخت کا نوٹس

سپریم کورٹ نے متروکہ وقف املاک کی غیر قانونی فروخت کا نوٹس لے لیا ہے۔ عدالت نے ڈی جی ایف آئی اے کو بھی فوری طلب کیا ہے۔چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ متروکہ وقف املاک بورڈ نے ساری جائیدادیں فروخت کر دی ہیں۔ کس قانون کے تحت متروکہ وقف املاک کی پراپرٹی فروخت کی گئی؟

معزز جج نے ریمارکس دیئے کہ حکومت کی متروکہ جائیدادیں کیسے فروخت کی جا سکتی ہیں۔ متروکہ املاک کو فروخت کرنا قانون کی خلاف ورزی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ لاکھوں کے حساب سے یہ جائیدادیں فروخت کر کے کھا گئے ہیں۔ اسطرح تو املاک بورڈ کو بنانے کا مقصد فوت ہوگیا۔ متروکہ املاک وقف بورڈ اپنی ذ مہ داری پوری کرنے میں ناکام ہوگیا۔

خیال رہے کہ سپریم کورٹ نے مارچ2021 میں متروکہ وقف املاک کی فروخت غیرقانونی قرار دے دیا تھا۔ عدالت نے املاک کی تمام اراضی کا فرانزک آڈٹ کرانے کا حکم بھی دیا تھا۔

سپریم کورٹ نے خلاف قانون سرگرمیوں میں ملوث افسران کیخلاف کارروائی کا حکم بھی دیا۔ چیئرمین متروکہ وقف املاک نے عدالت کو بتایا کہ ماضی میں غیرقانونی کام زیادہ ہونے پر دفاتر کو آگ لگا دی جاتی تھی۔ 39ہزار املاک میں سے تمام کا ریکارڈ دستیاب نہیں۔

Related Articles

Back to top button