پاکستانی خبریں

بلوچستان: ہرنائی میں سیکیورٹی فورسز کا آپریشن، بی ایل اے کمانڈر سمیت 6 دہشت گرد ہلاک

سیکیورٹی فورسز نے مصدقہ خفیہ اطلاع پر بلوچستان کے علاقے ہرنائی میں کارروائی کرتے ہوئے لوچستان لبریشن آرمی (بی ایل اے) کے کمانڈر سمیت 6 دہشت گردوں کو ہلاک کردیا۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) سے جاری بیان کے مطابق ‘بلوچستان میں ہرنائی کےعلاقے جامبورو کے نزدیک ایک ٹھکانے میں دہشت گردوں کی موجودگی کی مصدقہ اطلاع پر سیکیورٹی فورسز نے کارروائی کی’۔

بیان میں کہا گیا کہ ‘سیکیورٹی فورسز نے علاقے میں کارروائی کرتے ہوئے بلوچستان میں امن کے خلاف کرنے والے غیرملکی اسپانسرڈ دہشت گردوں کو گرفتار کرلیا’۔

آئی ایس پی آر نے کہا کہ ‘اہلکار جب علاقے کو گھیرےمیں لے رہے تھے تو دہشت گردوں نے ٹھکانے سے بھاگنے کی کوشش کی اور اندھادھند فائرنگ کی’۔

بیان کے مطابق ‘دہشت گردوں کے ساتھ شدید فائرنگ کا تبادلہ بڑی دیر تک جاری رہا’۔

آئی ایس پی آر نے کہا کہ ‘فائرنگ کے تبادلے کے نتیجے میں بی ایل اے کے کمانڈر طارق عرف ناصر سمیت 6 دہشت گرد ہلاک ہوگئے’۔

بیان میں مزید کہا گیا کہ ‘دہشت گردوں کے ٹھکانے سے بڑی مقدار میں اسلحہ اور بارود برآمد کیا گیا’۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ نے بتایا کہ اس طرح کی کارروائیاں پاکستان میں دہشت گردی کی کارروائیوں کے مرتکب افراد کے خاتمےکے لیے جاری رہیں گی اور انہیں بلوچستان کے عوام کے لیے بڑی محنت سے خوشحالی اور معاشی بہتری کے لیے حاصل کیا گیا موقع سبوتاژ کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گا۔

قبل ازیں بلوچستان پولیس کے محکمہ انسداد دہشت گردی (سی ٹی ڈی) نے ضلع مستونگ میں کارروائی کرتے ہوئے کالعدم تنظیموں سے تعلق رکھنے والے 9 مبینہ دہشت گردوں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا تھا۔

ترجمان سی ٹی ڈی نے کہا تھا کہ مستونگ کے علاقے روشی میں محکمے نے آپریشن کیا اور فائرنگ کے تبادلے میں 9 مبینہ دہشت گرد ہلاک ہوگئے جن کا تعلق بلوچستان لبریشن آرمی، بلوچستان لبریشن فرنٹ اور یونائیٹڈ بلوچستان آرمی سے تھا۔

Related Articles

Back to top button