پاکستانی خبریں

وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے فوڈ سیکیورٹی جمشید اقبال چیمہ عہدے سے مستعفی

وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے فوڈ سیکیورٹی جمشید اقبال چیمہ عہدے سے مستعفی ہوگئے.

ذرائع کے مطابق جمشید اقبال چیمہ این اے 133 لاہور کے ضمنی انتخابات میں حصہ لیں گے۔

جمشید اقبال چیمہ نے استعفی وزیراعظم کو بھجوا دیا ہے۔

خیال رہے کہ لاہور کی نشست این اے 133 پر 5 دسمبر کو ضمنی انتخاب ہو گا.

الیکشن کمیشن نے لاہور کی نشست این اے133 پر ضمنی انتخابات کا شیڈول جاری کردیا۔ امیدوار 21سے 25 اکتوبر تک کاغذات نامزدگی جمع کراسکیں گے۔ حلقےمیں پولنگ 5 دسمبر کو ہو گی۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ (ن) لاہور کے مرکزی رہنما اور رکن قومی اسمبلی پرویز ملک کی وفات کے بعد یہ نشست خالی ہو ئی تھی۔ این اے 133 کی نشست پر مسلم لیگ ن اور پی ٹی آئی کے درمیان بڑا سیاسی معرکہ ہوگا۔

این اے 133 کے ضمنی انتخابات کے لیے تا حال پاکستان مسلم لیگ ن کے امیدوار کا نام سامنے نہ آسکا۔ مسلم لیگ ن امیدوار کے لیے بڑے ناموں پر غور کر رہی ہے۔

نشست پر اپنے امیدوار کے لیے تحریک انصاف نے جمشید اقبال چیمہ کا نام فائنل کر لیا۔ تحریک انصاف کے نامزد امیدوار جمشید اقبال چیمہ کا تحریک انصاف کے ٹکٹ پر یہ تیسرا الیکشن اور تیسرا حلقہ ہوگا۔ جمشید چیمہ اس وقت وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے فوڈ سیکیورٹی ہیں جبکہ ان کی اہلیہ مسرت جمشید چیمہ مخصوص نشست پر رکن پنجاب اسمبلی ہیں۔

جمشید اقبال چیمہ2013 کے الیکشن سے قبل تحریک انصاف میں شامل ہوئے تھے۔ انھوں نے پہلا الیکشن2013ء میں لاہور کے صوبائی حلقہ پی پی146 سے لڑا جس میں انھوں نے23841 ووٹ حاصل کئے تھے جبکہ مسلم لیگ ن کے ملک محمد وحید نے 55850 ووٹ لیکر یہ نشست جیت لی تھی۔

2018 انہیں این اے 127 میں ٹکٹ دیا جہاں الیکشن میں جمشید اقبال چیمہ نے66818 ووٹ حاصل کئے تھے جبکہ مسلم لیگ ن کے علی پرویز ملک 113265 ووٹ لیکر کامیاب ہو ئے تھے۔

2018 کے الیکشن میں این اے 133 میں تحریک انصاف کے اعجاز چوہدری نے77231 ووٹ لیے جبکہ ن لیگ کے پرویز ملک(مرحوم)89678 ووٹ لیکر جیت گئے تھے۔

تجزیہ کاروں کا کہنا ہےکہ لاہور کے بلدیاتی انتخابات میں مسلم لیگ ن کی جیت کے بعد حکمران جماعت پی ٹی آئی کے لیے یہ ایک اہم اور مشکل معرکہ ہوگا۔ دوسری جانب پی ٹی آئی کو موجودہ حالات میں مہنگائی کے باعث شدید عوامی ردعمل کا سامنا بھی ہے۔

Related Articles

Back to top button