پاکستانی خبریں

افغان صورتحال: ہاکستان کا ہمسایہ ممالک کو اعتماد میں لینے کا فیصلہ

افغانستان میں انتقال اقتدار کے سلسلے میں پاکستان نے ہمسایہ ممالک کو اعتماد میں لینے کا فیصلہ کیا ہے۔

سفارتی ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی جلد 4 ہمسایہ ممالک کا دورہ کریں گے، ان دوروں کے دوران شاہ محمود افغان صورت حال اور انتقال اقتدار سے متعلق گفتگو کریں گے۔

سفارتی ذرائع کے مطابق وزیر خارجہ جن چار ممالک کا دورہ کریں گے ان میں ترکمانستان، تاجکستان، ازبکستان اور ایران شامل ہیں، وزیر خارجہ کا یہ دورہ 25 اگست سے 27 اگست تک ہوگا۔

وزیر خارجہ پاکستان اپنے دوروں میں افغانستان میں وسیع البنیاد حکومت کے قیام کی خواہش کا اعادہ کریں گے، ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیر خارجہ کے 4 ملکی دورے کے انتظامات کو حتمی شکل دی جا رہی ہے۔

واضح رہے کہ آج وزیر اعظم عمران خان نے ترک صدر رجب طیب اردوان سے دوبارہ رابطہ کر کے افغانستان کی صورت حال پر تبادلہ خیال کیا، وزیر اعظم عمران خان جرمن چانسلر سے بھی ٹیلی فونک رابطہ کریں گے۔

دوسری طرف آج آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے افغان سیاسی رہنماؤں کے وفد نے اہم ملاقات کی، آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ صلاح الدین ربانی کی سربراہی میں 8 رکنی وفد نے آرمی چیف سے ملاقات کی ہے، جس میں افغانستان کی صورت حال پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔

آرمی چیف نے پاکستان کا مؤقف پیش کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان افغانستان کے ساتھ وسیع تر تعلقات کا خواہاں ہیں، اور ہم افغانستان میں دیرپا امن کے لیے ہر ممکن اقدامات کے لیے تیار ہیں، معاملات کے حل سے خطے میں دیرپا امن و استحکام آئے گا۔

افغان وفد نے کہا کہ پاک فوج کی افغانستان میں امن کے لیے کوششیں قابل قدر ہیں، اس ملاقات میں افغان وفد نے مستقبل سے متعلق تجاویز بھی پیش کیں۔

Related Articles

Back to top button