پاکستانی خبریں

کورونا کے باعث لمبی چھٹیوں کے بعد تعلیمی ادارے ایک بار پھر کُھل گئے

کورونا کے باعث لمبی چھٹیوں کے بعد تعلیمی ادارے ایک بار پھر کُھل گئے ہیں۔ سندھ میں آٹھویں جماعت تک اسکول بند رہیں گےلاہور، راولپنڈی، فیصل آباد اور ملتان سمیت پنجاب بھر میں آج سے تعلیمی سرگرمیوں کا دوبارہ آغاز ہوگیا۔ اسلام آباد میں بھی بچے اسکولوں میں پہنچ گئے ہیں۔

ایبٹ آباد، لوئر دیر، باجوڑ اور مانسہرہ میں بھی اسکول کھل گئے ہیں۔ کوئٹہ میں بھی آج سے بچے اسکول جانا شروع ہوگئے ہیں۔

خیبرپختونخوا اور بلوچستان کے باقی اضلاع میں تعلیمی سرگرمیوں کا پہلے سے ہی آغاز ہوچکا ہے۔ آزاد کشمیر میں بھی آج سے تعلیمی سرگرمیاں شروع ہو گئی ہیں۔

سرکاری اسکول اور کالج کے اوقات صبح 8 بجے سے دوپہر ایک بجے تک ہیں۔ این سی او سی کی ہدایت کے مطابق کلاسز میں حاضری پچاس فیصد رکھنا ہو گی۔

تعلیمی اداروں میں کورونا سے بچاو کے احتیاطی تدابیر پر عمل لازمی ہوگا۔ تعلیمی اداروں میں کورونا سے بچاؤ کیلئے اسپرے کیے گئے ہیں اور احتیاطی تدابیر کے بینرز بھی آویزاں ہیں۔

ایک کلاس روم میں بچوں کی آدھی تعداد کو بٹھایا جائے گا۔ بیماری کا پھیلاؤ روکنے کے لیے سماجی دوری اپنائی جائے گی۔

کسی بھی شخص کو درجہ حرارت چیک کیے بغیر تعلیمی اداروں میں داخل ہونے نہیں دیا جائے گا۔ بچے کسی سے ہاتھ نہ نہیں ملائیں گے اور اسکول میں جھولا بھی نہیں جھولیں گے۔

اسکول میں بچوں کو ہاتھ دھونے کی ترغیب دی جائے گی اور اس کو یقینی بنانا تعلیمی اداروں ذمہ داری ہوگی۔

Related Articles

Back to top button