احتساب سب کا ہونا چاہیے چاہے وہ عمران خان ہو یا جہانگیر ترین، اکبر ایس بابر

احتساب سب کا ہونا چاہیے چاہے وہ عمران خان ہو یا جہانگیر ترین، اکبر ایس بابر

پاکستان تحریک انصاف کے سابق عہدیدار اکبر ایس بابر نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی عمران خان کی جماعت نہیں ہے۔پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے سابق عہدیدار اکبر ایس بابر نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سپریم کورٹ میں عمران خان نے میری ممبرشپ کو چیلنج کیا تاہم ہر عدالت اور فورم نے میرے حق…

انہوں نے کہا کہ آج فارن فنڈنگ کیس وکیل کی بیماری کی وجہ سے ملتوی کیا گیا ہے جبکہ پی ٹی آئی نے 2013 کی جانچ پڑتال سے انکار کر دیا ہے۔ الیکشن کمیشن نے مئی کے آخر میں اسکروٹنی کمیٹی کوحتمی رپورٹ جمع کرانے کا حکم دیا۔

اکبر ایس بابر نے کہا کہ فارن فنڈنگ کیس میں پی ٹی آئی 5 سال سے بھاگنے کی کوشش کر رہی ہے۔ پی ٹی آئی عمران خان کی جماعت نہیں ہے۔ پارٹی عمران خان کے نام سے نہیں تحریک انصاف کے نام سے رجسٹرڈ ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے عمران خان کو بھرپور سپورٹ کر کے اس مقام تک پہنچایا۔ تحریک انصاف بڑے مقصد کے لیے بنی تھی لیکن جب پارٹی کا سربراہ بادشاہ بن جائے تو ارکان کو اپنی رعایا سمجھ لیتا ہے۔

اکبر ایس بابر نے کہا کہ جہانگیر ترین کے پارٹی ممبر بننے سے قبل ہی میرے عمران خان سے اختلافات شروع ہو گئے تھے اور جب عمران خان مدینہ کی ریاست کی بات کرتے ہیں تو یاد رکھے کہ تب نیب نہیں تھا۔

انہوں نے کہا کہ ریاست مدینہ میں احتساب خود سے کیا جاتا تھا۔ احتساب سب کا ہونا چاہیے چاہے وہ عمران خان ہو، جہانگیر ترین ہو یا خسرو بختیار۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں