پشاور میں کورونا کے مسلسل بڑھتے کیسز، ان ڈور اور آؤٹ ڈور تقریبات پر پابندی عائد

پشاور میں کورونا کے مسلسل بڑھتے کیسز، ان ڈور اور آؤٹ ڈور تقریبات پر پابندی عائد

پشاور میں کورونا کے مسلسل بڑھتے ہوئے کیسز کی وجہ سے ان ڈور اور آؤٹ ڈور تقریبات پر پابندی عائد کر دی گئی۔

سرکاری اعلامیے کے مطابق اجتماعات اور ہر قسم کے ثقافتی، اسپورٹس، سماجی اور مذہبی اجتماعات پر بھی پابندی ہوگی۔ذرائع کے مطابق خیبر پختونخوا حکومت کورونا کی تیسری لہر میں تیزی کی وجہ سے 16 اضلاع میں مکمل لاک ڈاؤن لگانے پر غور کر رہی ہے، پشاور سمیت16 اضلاع میں کورونا کیسز میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے جب کہ پشاور کے تینوں بڑے اسپتالوں میں 83 فیصد کورونا بیڈز بھر گئے ہیں۔

وزیر اعلیٰ کے معاون اطلاعات کامران بنگش کا کہنا ہے کہ کورونا کیسز کی صورتحال تشویش ناک ہوگئی ہے، اسپتالوں میں مریضوں کے لیے جگہ نہ رہی تو سخت فیصلے کریں گے۔

دوسری جانب وزیر اعلیٰ محمود خان نے صوبائی ٹاسک فورس کا اجلاس آج طلب کیا ہے جس میں کل کے اجلاس میں لاک ڈاون سمیت دیگر آپشنز پر غور کیا جائیگا۔

 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں