اپوزیشن لیڈر شہبازشریف منی لانڈرنگ کیس میں درخواستِ ضمانت پر سماعت آج ہوگی

اپوزیشن لیڈر شہبازشریف منی لانڈرنگ کیس میں درخواستِ ضمانت پر سماعت آج ہوگی

ہائی کورٹ میں اپوزیشن لیڈر شہبازشریف کی درخواست ضمانت پر سماعت آج ہوگی، درخواست میں شہباز شریف نے استدعا کی ہے کہ ٹرائل باقاعدگی سے جوائن کرتا رہوں گا، عدالت ضمانت پر رہائی کا حکم دے۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائی کورٹ میں اپوزیشن لیڈر شہبازشریف منی لانڈرنگ کیس میں درخواستِ ضمانت پر سماعت آج ہوگی ، ہائی کورٹ کے جسٹس سرفرازڈوگر کی سربراہی میں 2 رکنی بنچ سماعت کرے گا۔

شہبازشریف کی درخواست میں چیئرمین اورڈی جی نیب کوفریق بنایاگیا ہے اور مؤقف میں کہا گیا ہے کہ نیب نے بدنیتی پر آمدن سے زائد اثاثوں کا کیس بنایا، حمزہ شہباز سمیت دیگر بچے کم عمری میں ہی خود کفیل تھے، میاں شریف نے پوتے،پوتیوں کوکم عمری میں کاروبار میں شراکت دار بنایا تھا۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ منی لانڈرنگ کاریفرنس دائرہوچکا ہے اور ٹرائل جاری ہے، کئی ماہ سے جیل میں قیدہوں جبکہ تمام ریکارڈ نیب کے پاس ہے، لیکن نیب نے کوئی ریکوری نہیں کی۔

شہباز شریف کا کہنا تھا کہ موجودہ حکومت کے سیاسی اثر و رسوخ کی وجہ سے نیب نے انکوائری شروع کی، وعدہ معاف گواہوں میں سے کسی نے بھی مجھے نامزد نہیں کیا، استدعا ہے ٹرائل باقاعدگی سے جوائن کرتا رہوں گا، عدالت ضمانت پر رہائی کا حکم دے۔

خیال رہے اے آر وائی نیوز کے پروگرام سوال یہ ہے میں گفتگو کرتے ہوئے پیپلز پارٹی کے رہنما چوہدری منظور نے دعویٰ کیا تھا کہ شہباز شریف کی ضمانت ہونے والی ہے۔

واضح رہے گذشتہ سال ستمبر میں لاہور ہائی کورٹ کی جانب سے عبوری ضمانت مسترد ہونے کے بعد نیب حکام نے شہبازشریف کو گرفتار کرلیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں