کورونا کیسز میں خطرناک اضافہ، اسلام آباد میں مقیم ایک اور سیاسی شخصیت بھی متاثر

کورونا کیسز میں خطرناک اضافہ، اسلام آباد میں مقیم ایک اور سیاسی شخصیت بھی متاثر

وفاقی دارالحکومت میں کورونا کیسز میں خطرناک اضافہ ہوگیا ہے، جس کے باعث وہاں مقیم سیاسی شخصیات بھی متاثر ہونے لگے ہیں۔

وفاقی دارالحکومت میں کورونا کیسز میں ریکارڈ اضافہ ہورہا ہے، ڈی ایچ اواسلام آباد کی جانب سے جاری بیان کے مطابق 24 گھنٹےمیں ریکارڈ747 کورونا کیس سامنےآئےہیں، جس کے باعث مثبت کیسزکی شرح ریکارڈ12.5فیصدتک پہنچ چکی ہے۔

کورونا کی تیسری لہر کے بڑھتے ہوئے وار کے باعث اسلام آباد میں رہائش پزید سیاسی رہنما بھی وائرس سے مبتلا ہونے لگے ہیں، وزیراعظم عمران خان کے بعد نون لیگ سے تعلق رکھنے والے سینیٹر عرفان صدیقی بھی کورونا سے متاثر ہوگئے ہیں۔

سابق وزیراعظم کے معاون خصوصی عرفان صدیقی نے طبیعت ناسازی کے باعث کورونا ٹیسٹ کرایا، جس کا نتیجہ مثبت آیا، کورونا ٹیسٹ کی رپورٹ مثبت آںے پر عرفان صدیقی نے خود کو گھر میں قرنطینہ کرلیا ہے۔

اس سے قبل معاون خصوصی ڈاکٹر فیصل سلطان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر وزیراعظم عمران خان کے کورونا ٹیسٹ مثبت آنے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا تھا کہ وزیراعظم کو کچھ علامات محسوس ہوئی تھی ، جس پر انھوں نے کورونا ٹیسٹ کرایا، جس کا نتیجہ مثبت آیا، کورونا ٹیسٹ مثبت آنے پر عمران خان نے تمام سیاسی سرگرمیاں ترک کردیں اور وزیراعظم ہاؤس سے بنی گالہ منتقل ہوگئے۔

دوسری جانب ڈی ایچ او اسلام آباد کا کہنا ہے کہ 24 گھنٹے کےدوران اسلام آباد میں کورونا کے3مریض انتقال کرگئے ہیں، اس وقت وفاقی دارالحکومت کے اسپتالوں میں کرونا کیلئےمختص46فیصدوینٹی لیٹرز زیر استعمال ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں