این اے 249 کے ضمنی انتخابات میں امجد آفریدی کو ٹکٹ جاری، پی ٹی آئی میں شدید اختلافات

این اے 249 کے ضمنی انتخابات میں امجد آفریدی کو ٹکٹ جاری، پی ٹی آئی میں شدید اختلافات

این اے 249 کے ضمنی انتخابات میں امجد آفریدی کو ٹکٹ دینے پر پی ٹی آئی میں شدید اختلافات سامنے آئے ہیں۔

قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 249 کے ضمنی انتخابات کے لئے تحریک انصاف کی جانب سے امجد آفریدی کو ٹکٹ جاری کردیا گیا ہے، تاہم امجد آفریدی کو ٹکٹ دینے پر پی ٹی آئی قیادت میں سخت اختلافات سامنے آگئے ہیں۔

پی ایس 116 سے تحریک انصاف کے رکن سندھ اسمبلی ملک شہزاد اعوان نے امجد آفریدی کو پارٹی ٹکٹ دینے کی شدید مخالفت کرتے ہوئے دھمکی دی ہے کہ جلد اپنا استعفی قیادت کو بھجوا دوں گا، کیوں کہ جو شخص یوسی اور صوبائی اسمبلی کا الیکشن ہار چکا ہے ان کو کس بنیاد پر ٹکٹ دیا گیا۔

شہزاد اعوان کا کہنا ہے کہ این اے 249 کے حوالے سے پارلیمانی بورڈ کو خط لکھا تھا کہ امجد آفریدی ایک کمزور امیدوار ہے، اور حلقے کی مقامی قیادت ان کو اسپورٹ نہیں کرے گی، امجد آفریدی پی ٹی آئی ضلع ویسٹ کراچی کے صدر ہیں اور انہوں نے آج تک یوسی کا بھی الیکشن نہیں جیتا، تو قیادت نے کس بنیاد پر قومی اسمبلی کے انتخابات کے لئے انہیں پارٹی ٹکٹ دے دیا، اسمبلی کی رکنیت سے استعفی دینے پر غور کررہے ہیں جلد ہی اپنا استعفیٰ قیادت کو بھیج دوں گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں