عورت مارچ کے موقعے پر مبینہ منتازع بینرز اور گستاخانہ نعروں کی تحقیقات کی جا رہی ہیں: وزیر مذہبی امور

عورت مارچ کے موقعے پر مبینہ منتازع بینرز اور گستاخانہ نعروں کی تحقیقات کی جا رہی ہیں: وزیر مذہبی امور

وفاقی وزیر مذہبی امور پیر نورا الحق قادری کا کہنا ہے کہ عورت مارچ کے موقعے پر مبینہ منتازع بینرز اور گستاخانہ نعروں کی تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

پیر نوراالحق قادری کا کہنا تھا کہ پاکستان عاشقان رسولﷺ کا ملک ہے یہاں پر شانِ رسالتؐ میں گستاخی کی ہرگز اجازت نہیں دی جا سکتی۔

انہوں نے کہا کہ مبینہ طور پر سوشل میڈیا پر جاری شدہ مواد کی حقیقت تک پہنچنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ ملوث کرداروں کو بےنقاب کر کے مقدمات دائر کریں گے۔وفاقی وزیر مذہبی امور کا یہ بھی کہنا تھا کہ عورت مارچ کے بینرز کو فوٹو شاپ کر کے نشر کرنے والے عناصر کو بھی سزا ملے گی۔

واضح رہے کہ 8 مارچ کو عالمی یوم خواتین پر ہونے والے عورت مارچ میں مبینہ طور پر متنازع بینرز اور نعروں کی تصاویر اور ویڈیوز سوشل میڈیا پر وائرل ہوئیں۔ مارچ کے منتظمین اور شرکا کا مؤقف ہے کہ ویڈیوز اور تصاویر کو ایڈٹ کرکے ان میں متنازع مواد شامل کیا گیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں