پاکستانی خبریں

فون کالزسے بات نہ بنی تو کیمرے لگا کر اپنے ہی ارکان کی جاسوسی کرنی پڑ گئی، مریم نواز

مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے کہ سند یافتہ ووٹ چور ہر بار ووٹ چوری کا نیا طریقہ ڈھونڈ کر لاتا ہے۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر شیئر کیے گئے ایک پیغام میں ان کا کہنا تھا کہ سند یافتہ ووٹ چور رنگے ہاتھوں پکڑا جاتا ہے، فون کالزسے بات نہ بنی تو کیمرے لگا کر اپنے ہی ارکان کی جاسوسی کرنی پڑ گئی۔
مریم نواز نے تحریر کیا کہ آر ٹی ایس اور ڈسکہ دھند کے بعد سینیٹ پرکی آخری جنگ ہار چکے، سپریم کورٹ سے منہ کی کھائی اور آئینی ترمیم میں ناکام رہے۔

مسلم لیگ ن کی نائب صدر نے تحریر کیا کہ صدارتی آرڈیننس ردی کا ٹکڑا بن گیا تو خفیہ کیمروں والے مستری لے آئے، آئین میں خفیہ ووٹ کا ذکر ہے خفیہ کیمروں کا نہیں۔

دوسری جانب چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کیلئے ووٹنگ کا عمل شروع ہونے سے قبل ہال سے خفیہ کیمرے اور ایک ڈیوائس بر آمد ہوئی ہے۔

سیکریٹری سینیٹ قاسم صمد خان نے کیمروں کے معاملہ پر کمیٹی بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کیمروں کے معاملہ پر پارلیمانی کمیٹی تشکیل دی جائے گی۔ کیمروں کے معاملہ کی مکمل شفاف انکوائری ہوگی۔

مصطفیٰ نواز کھوکھر کے مطابق صادق سنجرانی رات بھر سیکریٹریٹ میں رہے۔ صادق سنجرانی صبح ساڑھے 5بجے سینیٹ سیکریٹریٹ سے واپس گئے۔

پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما مصطفیٰ نواز کھوکھر اور ن لیگی رہنما مصدق ملک نے پولنگ بوتھ کے اوپر سے کیمرااتارا۔ مصطفیٰ نواز کھوکھر نے خفیہ کیمرے کی تصویر سوشل میڈیاپرشیئر کی۔

Related Articles

Back to top button