پاکستانی خبریں

ملک بھر میں شبِ معراج آج عقیدت و احترام سے منائی جائے گی

ملک بھر میں آج رحمتوں اور برکتوں والی رات شبِ معراج عقیدت و احترام کے ساتھ منائی جائے گی شب معراج کے موقع پر ملک بھر میں مساجد کو انتہائی خوبصورتی سے سجایا جاتا ہے، اہلِ ایمان والے نوافل ادا کرتے ہیں اور اپنی بخشش کی دعائیں مانگتے ہیں۔

رب العالمین نے آحضرت صلی اللہ علیہ وسلم کو عظمت ورفعت کی وہ معراج نصیب فرمائی جو روز ازل سے آپ کا ہی مقدر تھی، کائنات کے سربستہ رازوں، اسرار کا مشاہدہ کرانے اور بنی نوع انسان پر یہ امر واضح کرنے کیلئے کہ جہاں تک اللہ رب العزت کی ربوبیت ہے وہاں تک محمد عربی کی نبوت ہے۔شب معراج وہ شب ہے جب اللہ رب العزت نے اپنے حبیب حضرت محمد مصطفیٰ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو معراج کا شرف عطا کیا اور پانچ فرض نمازوں کا تحفہ عطا کیا۔

حضرت جبریلؑ براق لے کر نبی آخرالزماں ﷺکی خدمت میں حاضر ہوئے اور عرض کیا، اے اللہ کے رسول، آپ کا رب آپ سے ملاقات کا خواہشمند ہے۔ واقعۂ معراج کی تکمیل تین مراحل میں طئے ہوتی ہے۔ پہلا مرحلہ مسجد حرام سے بیت المقدس تک کا سفر ،جہاں تمام انبیائے کرام نے آپ ﷺ کی اقتداء میں نماز ادا کی، دوسرا مرحلہ بیت المقدس سے سدرۃ المنتھیٰ تک کا سفر اور تیسرا مرحلہ سدرۃ المنتھیٰ سے قَابَ قَوْسِیْن تک کی رفعتوں کا سفر۔

رسول اﷲ ﷺ بیت المقدس سے چلتے ہی اور تمام آسمانوں کی سیر کرتے اور انبیائے سابقین سے ملاقات کرتے ہوئے بیت المعمور پہونچتے ہیں۔پھر آپ کو سدرۃ المنتھیٰ لے جایا جاتا ہے ۔جب حضور اکرم ﷺ سدرۃ المنتھیٰ سے آگے بڑھنے لگے تو جبرئیل امین علیہ السلام رُک گئے ۔ عرض کرنے لگے اگر میں ایک چیونٹی برابر بھی آگے بڑھا تو جل جاؤنگا۔

حضور ﷺ آگے بڑھتے ہوئے لامکاں میں داخل ہوتے ہیں یہاں آگے ایک نور تھا اور مہمانِ عرش حضور رحمتِ عالم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو تن تنہا ان جلوؤں میں داخل کر دیا گیا۔ جوں ہی حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم آگے بڑھے آگے سے آواز آئی اے پیارے محمد صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم رک جائیے! بے شک آپ کا رب قریب آ رہا ہے۔

یہی وہ مقام ہے جہاں حضور ﷺ کو رُک جانے کا حکم ہوا یہی مقام ’’قَابَ قَوْسِیْن‘‘ تھا ۔اس مقام پر حضور سرورِ کون و مکاں ﷺ کو اﷲ تعالیٰ نے اپنے دیدار سے مشرف فرمایا، یہ وہ مقام ہے جہاں حقیقتِ مصطفی ﷺ کو معراج ہوئی۔سفر معراج کے دوران رسول کریمﷺ کو جنت اور دوزخ دکھائی گئیں، آپ کی ملاقات مختلف انبیائے کرام سے بھی ہوئی۔

Related Articles

Back to top button