فارن فنڈنگ کیس کی کھلی سماعت، الیکشن کمیشن کا بیان جاری

فارن فنڈنگ کیس کی کھلی سماعت، الیکشن کمیشن کا بیان جاری

الیکشن کمیشن نے فارن فنڈنگ کیس کی کھلی سماعت کے حوالے ایک بار پھر وضاحت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسکروٹنی کمیٹی کی رپورٹ کے بعد کیس کی کھلی سماعت ہوگی۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے فارن فنڈنگ کیس کی کھلی سماعت کے حوالے ایک بار پھر وضاحت کردی ، ترجمان الیکشن کمیشن نے کہا ہے کہ اسکروٹنی کمیٹی کی رپورٹ کے بعد کیس کی کھلی سماعت ہوگی، فارن فنڈنگ کیس کی کھلی سماعت پرمؤقف پہلےہی اعلامیہ کےذریعے شیئر کیا جا چکا ہے۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ فارن فنڈنگ کیس کی کھلی سماعت پرالجھاؤمحسوس کیا جارہا ہے، اسکروٹنی کمیٹی اجلاس فریقین کی موجودگی میں ہوتاہے،کمیٹی کی کھلی سماعت نہیں ہوگی۔

یاد رہے فارن فنڈنگ کیس پر الیکشن کمیشن آف پاکستان نے اعلامیہ جاری کیا تھا ،جس میں کہا گیا تھا کہ اسکروٹنی کمیٹی کی طرف سے کارروائی جاری ہے، غیر ضروری تبصروں سےگریزکیا جائے۔

الیکشن کمیشن کا کہنا تھا کہ یہ بہت ہی اہم اور حساس کیس ہے ، اس پر میرٹ پر فیصلہ قومی مفاد میں ہے ، الیکشن کمیشن میں پہلے ہی کیس کی سماعت فریقین کے سامنےہورہی ہے جبکہ دوران سماعت میڈیا ،دوسرےمتعلقہ اشخاص،ادارے موجودہوتےہیں۔

اعلامیے میں کہا گیا تھا کہ اسکروٹنی کمیٹی کے اختیارات یامنصب ایک جےآئی ٹی کاہے ، اس کی کارروائی عوامی سطح پر نہیں ہو سکتی، اس سے کمیٹی کو اپنا کام کرنے میں دشواری ہوگی۔

الیکشن کمیشن نے کہا تھا کہ کمیٹی اپنی جامع سفارشات مرتب کر کے کمیشن کو پیش کرےگی، کمیشن کھلی سماعت میں یہ سفارشات دونوں پارٹیوں کومہیا کرے گا اور دونوں اطراف کی بحث سننے کے بعد جلد میرٹ پر فیصلہ ہو گا اور بغیر کسی خوف یا دباؤکےمیرٹ پر فیصلہ کیاجائےگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں