جیلوں میں بند قیدی بھی کورونا وائرس سے ٖغیر محفوظ

جیلوں میں بند قیدی بھی کورونا وائرس سے ٖغیر محفوظ

پاکستان کی جیلوں میں سینکڑوں قیدی کورونا وائرس سے متاثر ہو چکے ہیں اور سب سے زیادہ تعداد سندھ میں ہے۔سپریم کورٹ میں جیلوں میں قید خواتین کی حالت زار سے متعلق کیس میں جمع کرائی گئی رپورٹ کے مطابق سندھ کی جیلوں میں سب سے زیادہ 291 کورونا مثبت قیدی ہیں۔

خیبرپختونخوا کی جیلوں میں کورونا سے126متاثرہ قیدی ہیں۔ بلوچستان80 اور پنجاب میں3 قیدی کورونا وائرس سے متاثر ہیں۔

رپورٹ کے مطابق بلوچستان کے علاوہ تینوں صوبوں کی جیلوں میں استعداد سے زیادہ قیدی ہیں۔ سب سے زیادہ خواتین پنجاب کی جیلوں میں قید ہیں۔

وفاقی محتسب نے اپنی رپورٹ میں ہرضلع اور اسلام آباد میں جیل قائم کرنے کی تجویز دی ہے۔ جیلوں میں خواتین،کمسن اور نشے کے عادی قیدیوں کیلئے الگ جگہ مختص کرنے کی بھی تجویز دی گئی ہے۔

رپورٹ میں قیدیوں کی فلاح اور تعلیم کیلئے مناسب انتظام کرنے کی تجویز بھی دی گئی ہے۔

سپریم کورٹ کو آگاہ کیا گیا کہ وفاق اور صوبوں کے ہر ضلع میں جیلیں قائم کرنے کا کام جاری ہے۔ وفاق اور صوبوں نے انڈر ٹرائل قیدیوں کی قانونی امداد کیلئے کمیٹیاں قائم کر دی گئی ہیں۔ قیدیوں کی تعلیم اور ہنر سکھانے پر بھی کام کیا جارہا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں