شہر قائد سمیت سندھ بھرمیں گیس کا بحران شدت اختیار کرگیا

شہر قائد سمیت سندھ بھرمیں گیس کا بحران شدت اختیار کرگیا

شہر قائد سمیت پورے صوبے میں گیس کا بحران شدت اختیار کرگیا، سوئی سدرن گیس نے غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کی تصدیق کردی۔

موسمِ سرما کا آغاز ہوتے ہی کراچی کے مختلف رہائشی علاقوں میں گیس کی دس سے بارہ گھنٹے غیراعلانیہ لوڈ شیڈنگ جاری ہے۔

صنعتوں کو گیس کی فراہمی معطل ہونے کے باوجود بھی رہائشی علاقوں میں بدترین گیس لوڈشیڈنگ کی وجہ سے بحران پیدا ہوگیا جس کی وجہ سے شہریوں کو اذیت کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

نارتھ کراچی، سر سید ٹاون، شادمان ٹاون، ملیر،نارتھ ناظم اباد لیاری، لیاقت آباد اورنگی،سائٹ ،لانڈھی اور فیڈرل بی ایریا میں گزشتہ کئی روز سے سوئی سدرن گیس کمپنی کی جانب سے روزانہ آٹھ سے دس گھنٹے گیس کی فراہمی بند کی جارہی ہے۔

ایس ایس جی سی کی جانب سے جاری اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ نان ایکسپورٹ صنعتی یونٹس کو گیس کی فراہمی مکمل بند ہونے کے باوجود کمپنی کو ایک سو پچاس ایم ایم سی ایف ڈی گیس کی کمی کا سامنا ہے۔

ایس ایس جی سی ترجمان کے مطابق گھریلو صارفین کی طلب کو پورا کرنے کے لیے نان ایکسپورٹ صنعتی یونٹس کو گیس کی سپلائی بند کی گئی ہے، اس ضمن وفاقی حکومت کو آگاہ کردیا گیا ہے۔

ترجمان ایس ایس جی سی نان ایکسپورٹ صنعتی یونٹس کے کیپٹو پاؤر کو اکتیس جنوری تک گیس فراہمی بند رہے گی، تمام صنعتی ایسوسی ایشن کو گیس بندش سے متعلق نوٹسز جاری کردیے گئے ہیں۔

ایس ایس جی سی کے مطابق ایکسپورٹ یونٹس کو گیس کی فراہمی کا سلسلہ جاری رہے گا اور طلب پوری کرنے کے لیے اقدامات کیے جائیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں