پی ڈی ایم لاکھوں کا جلسہ بھی کرلیں لیکن ان کو این آر او نہیں ملے گا: عمران خان

وزیراعظم عمران خان نے خبردار کیا ہے کہ کورونا وائرس کے کیسز میں ایسے ہی اضافہ ہوتا رہا تو ملک میں مکمل لاک ڈاؤن کرنے پر مجبور ہوں گے۔

تفصیلات کے مطابق سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر وزیراعظم نے ٹوئٹ کیا کہ پاکستان میں کرونا کی دوسری لہر تشویشناک ہے، گزشتہ 15دن میں وینٹی لیٹرز پر کورونا مریضوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ دنیا بھر میں کورونا کی دوسری لہر جاری ہے، دوسری لہر کے باعث مختلف ممالک میں لاک ڈاؤن ہے، پی ڈی ایم جان بوجھ کر جلسے کرکے عوام کی زندگی خطرے میں ڈال رہی ہے۔

عمران خان نے ٹوئٹر پر لکھا کہ کیسز میں ایسے ہی اضافہ ہوتا رہا تو مکمل لاک ڈاؤن کرنے پر مجبور ہوں گے، این آر او کے لیے بےچین اپوزیشن عوام کی جان اور روزگار تباہ کرنے پر تلی ہے۔

وزیراعظم نے واضح کردیا کہ پی ڈی ایم لاکھوں کا جلسہ بھی کرلیں لیکن ان کو این آر او نہیں ملے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ پی ڈی ایم مکمل لاک ڈاؤن ہونے اور نتائج کی ذمہ دار ہوگی، این آر او کے لیے بےچین اپوزیشن عوام کی جان اور روزگار تباہ کرنے پر تلی ہے، واضح کردوں یہ لاکھوں کا جلسہ بھی کرلیں لیکن ان کو این آر او نہیں ملے گا۔

عمران کان کا مزید کہنا تھا کہ لاک ڈاؤن کرنے جیسے اقدامات نہیں کرنا چاہتا جن سے معیشت کو نقصان ہو، ہماری معیشت مضبوط اور بحالی کے اشارے دینا شروع ہوئی ہے، بدقسمتی سے اپوزیشن کا واحد مقصد این آر او لینا ہے، اپوزیشن کو این آر او چاہیے چاہے زندگیاں اور معیشت داؤ پر لگ جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں