کورونا وائرس نے مزید 30 جانیں نگل لیں، جانبحق افراد کی مجموعی تعداد6ہزار923 ہوگئی

کورونا وائرس نے مزید 30 جانیں نگل لیں، جانبحق افراد کی مجموعی تعداد6ہزار923 ہوگئی

پاکستان میں کورونا وائرس کے سبب مزید30 اموات رپورٹ ہوئی ہیں اور مرنے والوں کی مجموعی تعداد6ہزار923 ہوگئی ہے۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے مطابق ملک بھر میں کورونا کےایک ہزار376 نئے کیسز رپورٹ ہوئے اور متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد3لاکھ40 ہزار251تک پہنچ گئی ہے۔

پاکستان میں کورونا کے3 لاکھ17ہزار86 مریض صحتیاب ہوگئے ہیں اور16ہزار242 زیرعلاج ہیں۔

اسلام آباد میں کورونا کیسزکی تعداد20 ہزار967ہوگئی ہے۔ پنجاب ایک لاکھ 5 ہزار856، سندھ میں ایک لاکھ 48 ہزار343، خیبر پختونخوا میں 40 ہزار148، بلوچستان میں 16 ہزار33، گلگت بلتستان میں 4 ہزار332 اور آزاد کشمیرمیں 4ہزار572 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔

کورونا وائرس کے باعث پنجاب میں 2 ہزار 390 اور سندھ میں 2 ہزار664 اموات ہو چکی ہیں۔ خیبر پختونخوا میں اموات کی تعداد ایک ہزار287، اسلام آباد میں 231، بلوچستان میں 152، ‏گلگت بلتستان میں 92 اور آزاد کشمیر میں 107 ہو گئی ہے۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر نے پاکستان میں کورونا وائرس سے بچاؤ کیلئے ماسک پہننا لازمی قرار دے دیا ہے۔

شہری گھروں سے باہر نکلتے وقت ماسک لازمی پہنیں۔ حکومتی اور نجی سیکٹرز کے دفاتر میں کام کرنے والوں کے لیے ماسک پہننا لازم ہوگا۔

صوبائی حکومتوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ بازاروں، شاپنگ مالز، پبلک ٹرانسپورٹ، ریسٹورنٹس میں ایس او پیز اور ماسک کو لازم قرار دیں۔

این سی او سی کے مطابق ملک کے 11شہروں میں کورونا وباتیزی سے پھیل رہی ہے۔ پاکستان میں اسی فیصد کورونا کیسز گیارہ بڑے شہروں سے رپورٹ ہوئے۔

کراچی، کوئٹہ، لاہور، اسلام آباد، راولپنڈی، حیدرآباد، گلگت، مظفر آباد اور پشاور بھی کورونا کے زیادہ کیسز رپورٹ ہوئے۔

معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان نے کہا کہ پاکستان میں کورونا وائرس کی دوسری لہر بتدریج شروع ہو چکی ہے۔

دوسری لہر سے نمٹنے کے لیے ایس اوپیز پر سختی سےعمل کرنا ہو گا۔ احتیاطی تدابیر پرعمل پیرا ہو کر ہم کورونا کی دوسری لہرسے نمٹ سکتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں