کراچی کے علاقے سہراب گوٹھ میں مبینہ پولیس مقابلے میں ایک ڈاکو ہلاک

کراچی پولیس کے مطابق سہراب گوٹھ میں مبینہ پولیس مقابلے میں ایک ڈاکو ہلاک ہوگیا۔

 کراچی کے علاقے سہراب گوٹھ مقابلے میں مارے گئے ڈاکو کی شناخت فضل اللہ کے نام سے ہوئی ہے۔ پولیس کے مطابق ملزم متعدد وارداتوں میں ملوث تھا۔

دوسری نیو کراچی کے علاقے شفیق موڑ کے قریب شہریوں کی تشدد سے بچنے کے لیے مبینہ ڈاکو نے نالے میں چھلانگ لگا دی۔

خیال رہے کہ گزشتہ ہفتے لاہور وحدت روڈ پر مبینہ پولیس مقابلے کے دوران فائرنگ کی زد میں آکر ایک طالبہ جاں بحق ہوگئی تھی، جبکہ 3 ڈاکو پکڑے گئے تھے۔

ترجمان کے مطابق ڈولفن و پولیس ریسانس یونٹ کا ڈاکوؤں سے آمنا سامنا ہوا تھا۔ تینوں ڈاکووؤں نے سمن آباد ملت پارک میں یکے بعد دیگرے وارداتیں کر کے فرار ہو رہے کہ ڈولفن فورس سے ان کا سامنا ہوا تھا۔

ترجمان یاسین بٹ کے مطابق ڈولفن ا سکواڈ پی آر یو ڈاکوؤں کا تعاقب کر رہا تھا کہ فائرنگ کا تبادلہ ہوا۔ ڈولفن اسکواڑ نے تینوں ڈاکو گرفتار لیے اور بعد میں مقامی پولیس کے حوالے کر دیے تھے۔

ترجمان کے مطابق مبینہ پولیس مقابلے میں گرفتار ڈاکو پہلے سے جرائم ریکارڈ یافتہ نکلے تھے۔ پولیس کے مطابق گرفتار ملزمان پر پہلے بھی کئی مقدمات درج ہیں۔

واقعہ کےعینی شاہد کے مطابق پیرو پیٹرولنگ گاڑی ڈاکووَں کا تعاقب کررہی تھی اور ڈاکو بہت آگے جاچکے تھے، جب پیرو کی گاڑی سے ایک اہلکار نے فائر کیا۔

عینی شاہد کے مطابق فائر کے فوری بعد ہم نے لڑکی کو موٹر سائیکل سے گرتے دیکھا گیا۔ جیسے ہی لڑکی کو موٹرسائیکل سے گرتےدیکھا تو ہم اسے اٹھانے کے لیے آگے بڑھے۔ ڈاکووَں کی جانب سے ہم نے فائرہوتے نہیں دیکھا۔

ایس پی اقبال ٹاون کیپٹن ریٹائرڈ اجمل کے مطابق ڈولفن اہلکاروں اور ڈاکووں کی فائرنگ کے تبادلے میں 22 سالہ راہگیر لڑکی جاں بحق ہوئی تھی۔ بائیس سالہ لڑکی کی شناخت فاطمہ کے نام سے ہوئی تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں