سابق وزیر اعلیٰ سندھ نے اپنے ہی بیٹوں اور پوتوں پر مقدمہ درج کرا دیا

سابق وزیر اعلیٰ سندھ غوث علی شاہ نے اپنے بیٹوں اور پوتوں کے خلاف زمین پر قبضے کا مقدمہ درج کرا دیا۔

صوبہ سندھ کے سابق وزیر اعلیٰ کی جانب سے پریالو تھانے میں زمین پر قبضے کا مقدمہ درج کرایا گیا ہے جس میں غوث علی شاہ نے اپنے بیٹے شبیر حیدر اور علی حیدر شاہ کو نامزد کیا۔

87 سالہ غوث علی شاہ نے زمین پر قبضے کے مقدمے میں اپنے پوتوں قربان، نواز علی، جعفر شاہ اور انکے ماموں زاد بھائی کو بھی نامزد کیا ہے۔

مقدمے میں سابق وزیر اعلیٰ سندھ نے موقف اختیار کیا کہ اپنی ملکیت بیوی کو تحفے میں دینا چاہی تو میرے بیٹوں اور پوتوں نے دھمکیاں دیں۔

ایف آئی آر کے متن میں غوث علی شاہ نے کہا کہ بیٹوں اور پوتوں کی طرف سے میرے باغ کے پیسے بھی پڑپ کیے گئے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پولیس نے ایف آئی آر میں نامزد ملزم جعفر شاہ سمیت چار افراد کو گرفتار کرلیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں