پرائیویٹ اسکولوں کی فیسوں میں اضافہ، لاہور ہائی کورٹ نے تحریری حکم جاری کردیا

پرائیویٹ اسکولوں کی فیسوں میں اضافے کے خلاف درخواستوں پر لاہور ہائی کورٹ نے تحریری حکم جاری کردیا، ڈسٹرکٹ ریگولیٹری اتھارٹی کو سات روز میں تمام اسکولوں کی فیسوں میں اضافے کا علیحدہ علیحدہ جائزہ لینے کی ہدایت کی گئی ہے۔

لاہور ہائی کورٹ کی جانب سے پرائیویٹ اسکولوں کی فیسوں میں اضافے کے خلاف درخواستوں پر تحریری حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ ڈسٹرکٹ ریگولیٹری اتھارٹی تمام اسکولوں کی فیسوں میں اضافے کا علیحدہ علیحدہ جائزہ لے اور یہ عمل سات روز میں مکمل کرے۔

حکم نامے میں مزید کہا گیا کہ ڈسٹرکٹ ریگولیٹری اتھارٹی سپریم کورٹ کے فیصلے کے برعکس بڑھائی گئی فیسوں کو کالعدم قرار دے اور طلبا سے وصول کی گئی اضافی فیسیں واپس کی جائیں جبکہ طلبا کے والدین قانون کے مطابق بڑھائی گئی فیسوں کے واجبات سات روز میں ادا کریں۔

تحریری حکم میں کہا گیا کہ ڈسٹرکٹ ریگولیٹری اتھارٹی کے فیصلے تک طلباء کو کلاسیں لینے کی اجازت ہوگی اور ڈسٹرکٹ ریگولیٹری اتھارٹی طلبا کی داد رسی کرنے کا پابند ہو گا۔

تحریری حکم میں تمام اسکولوں کی انتظامیہ سے کہا گیا ہے کہ وہ بارہ اکتوبر کو ڈسٹرکٹ ریگولیٹری اتھارٹی کے روبرو اپنا مؤقف پیش کریں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں