ملک میں 35 تعلیمی ادارے ایس او پیز کی خلاف وارزی پر سیل

تعلیمی ادارے کھلتے ہی کورونا نے اس طرف کا رخ کرلیا۔ ملک بھر میں پینتیس سے زائد طلبا میں کورونا کی علامات پر تعلیمی ادارے بند کردئیے۔ کورونا سندھ اور وفاق کو آمنے سامنے لے آیا۔ وفاق صوبے کے فیصلے پر حیران ہوا۔ اسکول شیڈیول کے مطابق کھولنے کا اعلان کیا۔ پنجاب میں بھی اسکول شیڈول کے مطابق کھلیں گے۔

کورونا کو تعلیمی ادارے پسند آنے لگے۔ ایس او پیز پی پابندی سے لاپرواہی موذی وبا کا کام آسان کرنے لگی۔

ملک میں کورونا ایس او پیز کی خلاف ورزی پر 35 تعلیمی ادارے سیل کردئیے گئے۔ گوجرانوالہ کی پانچ اسکولوں میں چوبیس بچو ں کے کورونا ٹیسٹ مثبت آگئے۔ شاہ کوٹ میں سرکاری اسکول اور کالج سیل کر دئیے گئے۔

کوئٹہ سمیت صوبے کے نو ہائی اسکولوں اور ایک یونیورسٹی کو کورونا وائرس کے درجنوں کیسز رپورٹ ہونے کے بعد تاحکم ثانی بند کردیا گیا ہے۔

سندھ میں اکیس ستمبر کے دوسرے مرحلے کو ایک ہفتے کے لئے موخر کردیا۔ صوبائی وزیر تعلیم سعید غنی کہتے ہیں ہمارے بچوں کی صحت نجی تعلیمی اداروں کے نقصانات سے زیادہ اہم ہے۔ بچوں کی صحت پر سمجھوتہ نہیں کر سکتے۔

وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے سندھ حکومت کے فیصلے کو جلد بازی قرار دے دیا۔ کہا تمام صوبوں کی مشاورت سے تعلیمی ادارے کھولنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔ طلبا ہماری پہلی ترجیح ہیں۔

کوئی بھی فیصلہ کرنے سے پہلے وزارت صحت سے مشورہ کریں گے۔ پنجاب نے بھی شیڈیول کے مطابق اسکول کھولنے کا اعلان کردیا۔

صوبائی وزیر تعلیم کہتے ہیں کورونا متاثر اسٹاف والے اسکول سیل کردیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں