صدر اور وزیراعظم کی مراعات کم، بل لانے کی منظوری

وزیراعظم عمران خان نے بطور وزیراعظم اپنی اور صدر پاکستان کی مراعات کم کرنے کا بل لانے کی منظوری دے دی۔ مراعات میں کمی کا قانون پارلیمنٹ سے منظور کرانے کی ہدایت کردی۔

وزیراعظم عمران خان نے ایک اور تاریخی اقدام اٹھاتے ہوئے بطوروزیراعظم اپنی اور صدر پاکستان کی مراعات کم کرنے کا بل لانے کی منظوری دے دی۔

اس سلسلے میں وزیراعظم عمران خان کا مشیر پارلیمانی امور ڈاکٹر بابر اعوان سے رابطہ ہوا، جس میں وزیراعظم نے مراعات میں کمی کا قانون پارلیمنٹ سے منظور کرانے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا سرکاری خرچ پروی آئی پی اخراجات کا کلچرختم کریں۔

وزیراعظم عمران خان کی ہدایت پر ڈاکٹر بابر اعوان نے قانون سازی پر کام تیز کر دیا ہے

بابر اعوان کا کہنا ہے کہ سربراہان مملکت کی مراعات میں کمی کا بل جلد پارلیمنٹ میں پیش کریں گے۔

انتخابی منشور سمیت عوام سے کفایت شعاری کا وعدہ پورا ہوگا۔ ڈاکٹر بابر اعوان کا کہنا تھا کہ بل کے ذریعے سربراہان مملکت کے کئی شہروں میں کیمپ آفسز ڈکلیئر کرنے کی شق کا خاتمہ ہوگا۔

صدر اور وزیراعظم صرف ایک سرکاری رہائش گاہ رکھ سکیں گے۔

ماضی میں سربراہان نے ایک سے زائد رہائشگاہوں کو کیمپ آفسز کا درجہ دیا۔ سیکیورٹی، ملازمین، کھانے پینے، انٹرنیٹ، ٹیلی فون مد میں کروڑوں خرچ ہوئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں