ترجمان سندھ حکومت نے تعلیمی ادارے کھولنے کے حکومتی فیصلے پر نظر ثانی کی اپیل کر دی

سندھ حکومت کے ترجمان مرتضیٰ وہاب نے تعلیمی ادارے کھولنے کے حکومتی فیصلے پر نظر ثانی کی اپیل کر دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ حکومت کے ترجمان اور مشیر قانون بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے ایک ٹوئٹ میں اپیل کی ہے کہ وفاق اور صوبائی حکومت اسکول خصوصاً پرائمری سیکشن کھولنے کے فیصلے پر نظر ثانی کریں۔

انھوں نے کہا کہ بہ طور والد میں سمجھتا ہوں کہ کرونا وائرس کی وبا سے متعلق صورت حال تاحال غیر یقینی ہے۔

مرتضیٰ وہاب نے ٹوئٹ میں اپنا مؤقف پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ چھوٹے بچے کرونا ایس او پیز پر عمل نہیں کر پائیں گے، اس لیے پرائمری اسکول کھولنے کے وفاقی و صوبائی فیصلوں پر نظر ثانی کی جائے۔

 

واضح رہے کہ گزشتہ روز وزیر تعلیم سندھ سعید غنی نے کہا تھا کہ ہفتے کی چھٹی ختم کر دی گئی ہے، اسکول اب 6 دن کھلیں گے، سعید غنی نے کہا ہم نے غیر معمولی حالات میں دوبارہ بچوں کو اسکول بھیجنے کا فیصلہ کیا ہے، 15 ستمبر سے تعلیمی ادارے کھل جائیں گے، کرونا صورت حال میں تعلیم کے حوالے سے یہ مشکل فیصلہ ہے۔

یاد رہے کہ 7 ستمبر کو حکومت نے 15 ستمبر سے ملک بھر میں تعلیمی ادارے کھولنے کا اعلان کیا تھا، وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کا کہنا تھا کہ تعلیمی نقصان کو چند ماہ میں پورا کرنے کی کوشش کریں گے۔

 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں