نوازشریف کی واپسی کیلئے تمام قانونی ذرائع استعمال میں لائے جائیں: وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ مسلم لیگ (ن) نے نوازشریف کی صحت پر سیاست کی اور ان کی واپسی کے لیے تمام قانونی ذرائع استعمال میں لائے جائیں۔

وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت پارلیمنٹ میں حکومتی اور پارٹی ترجمانوں کا اجلاس ہوا جس میں ملکی سیاسی صورتحال پر غور کیا گیا۔

ذرائع کے مطابق متعلق مشیر پارلیمانی امور بابراعوان نے پارلیمنٹ میں قانون سازی سے متعلق بریفنگ دی۔

ذرائع نے بتایا کہ موجودہ سیاسی صورتحال میں اپوزیشن کے بیانیے سے متعلق حکمت عملی اور نوازشریف کو وطن واپس لانے سے متعلق اقدامات پر حکومتی حکمت عملی پر مشاورت کی گئی۔

اس موقع پر وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ عدالتوں کو مطلوب افراد کو واپس لانا حکومت کی ذمہ داری ہے اورمسلم لیگ (ن) نے نوازشریف کی صحت پر سیاست کی۔

انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کی بلیک میلنگ میں نہیں آئیں گے، اپوزیشن کا فوکس ملکی مفاد نہیں، مقدمات سے چھٹکارا حاصل کرنا ہے، نوازشریف کی واپسی کے لیے تمام قانونی ذرائع استعمال میں لائے جائیں۔

ذرائع کے مطابق قومی اسمبلی میں ایف اے ٹی ایف قوانین کی منظوری کے بارے میں حکمت عملی پرتبادلہ خیال کیا گیا۔

ذرائع نے بتایا کہ وزیراعظم نے ترجمانوں کو ملکی معاشی صورتحال میں بہتری مؤثر طور پر اجاگر کرنے کی ہدایت کی اور کہا کہ معیشت سے متعلق فیصلوں کے ثمرات آنا شروع ہوگئے، اب پوری توجہ بہتر معاشی اعشاریوں کے ثمرات عوام تک پہنچانے پر ہے۔

خیال رہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف 19 نومبر 2019 سے علاج کی غرض سے لندن میں مقیم ہیں۔

گزشتہ دنوں سابق وزیراعظم نواز شریف کی لندن کی اسٹریٹس پر بیٹے کے ساتھ چہل قدمی کی نئی تصویر سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی ہے جس پر حکومت کی جانب سے تنقید کی جارہی ہے۔

اس تصویر کے وائرل ہونے کے بعد حکومت کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ نواز شریف بیماری کا بہانہ بناکر چلے گئے، انہیں واپس لانا ضروری ہوگیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں