احساس نشوونما پروگرام: مستحقین خواتین کو اب نقد وظائف کے علاوہ مزید کن سہولیات سے نوازا جائے گا؟

معاون خصوصی ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے احساس نشوونما پروگرام کی تیاریوں کا جائزہ لیا اور کہا مستحقین خواتین کے لیے رجسٹریشن ڈیسک قائم کیا گیا ہے، اس پروگرام میں صارف خواتین کو نشوونما کیش وظائف بھی دئیے جائیں گے۔

وزیراعظم کی معاون خصوصی ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ اجراء سے قبل احساس نشوونما پروگرام کی تیاریوں کا جائزہ لینے کیلئے کل ٹیم کےساتھ خیبر کےڈی ایچ کیواسپتال میں نشوونمامرکز کا دورہ کیا اور اسٹنٹنگ سے بچاؤ کی سہولتوں سے متعلق عملی مشقیں دیکھیں جبکہ موقع پرموجود عملے اور احساس مستحقین خواتین سے ملاقات کی۔

ڈاکٹر ثانیہ نشتر کا کہنا تھا کہ نشوونما مرکز پر احساس مستحقین خواتین کے لیے رجسٹریشن ڈیسک قائم کیا گیا ہے، عملہ نشوونما ایپ میں حاملہ ،دودھ پلانے والی خواتین اور بچوں کا اندراج کرے گا۔

معاون خصوصی نے مزید کہا ہمارا عملہ خواتین اور 2سال سے کم عمربچوں کا سٹنٹنگ سے منسلک قد،وزن اورصحت کا تفصیلی معائنہ کرے گا جبکہ متاثرہ بچوں اورخواتین کے لیے حفاظتی ٹیکہ جات اورخوراک کاپلان بنایاجائے گا اور ان کی صحت کی نگرانی کیلیئے نشوونما ایپ میں اندراج کیا جائے گا اور رہنما کتابچے میں ریکارڈ رکھا جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ نشوونما پروگرام سے مستفید ہونے والی خواتین کی آگاہی اور معلوماتی ویڈیوز کاعلاقائی زبانوں میں خصوصی اہتمام کیا گیا ہے، احساس نشوونما کی صارف خواتین کےلیےآگاہی سیشن میں شامل ہونا لازمی ہے۔

ثانیہ نشتر نے کہا کہ حاملہ و دودھ پلانے والی خواتین اورانکے کمزور بچوں کو اسٹنٹنگ سے بچانے کے لیے اضافی غذائی پیکٹ فراہم دیے جائیں گے، اضافی غذا کی تقسیم کے لیے الگ کاؤنٹر قائم کیا گیا ہے، عملہ غذا کے استعمال سےمتعلق خواتین کی مکمل رہنمائی کرے گا۔

معاون خصوصی کا کہنا تھا کہ نشوونما پروگرام میں صارف خواتین کو نشوونما نقد وظائف بھی دئیے جائیں گے، صحت بخش غذا حاصل کرنے کے بعد خواتین مرکز پر اے ٹی ایم سے وظیفہ حال کرسکیں گے۔

 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں