سینیٹر میاں عتیق نے آن لائن گیم پب جی بند کرنے کا مطالبہ کر دیا

متحدہ قومی موؤمنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان کے سینیٹر میاں عتیق نے آن لائن گیم پب جی بند کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے یوٹیوب اور ٹک ٹاک کی بندش کی مخالفت کردی۔

سینیٹ اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے سینیٹر میاں عتیق کا کہنا تھا کہ پب جی سمیت ایسے تمام گیمز کو فوری طور پر بند کیا جائے جن کی وجہ سے نوجوان نسل تباہ ہورہی ہے۔

انہوں نے سوشل میڈیا ایپس کی ممکنہ بندش کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے ملک کو انفارمیشن ٹیکنالوجی (آئی ٹی) کے شعبے میں بہت پیچھے رکھا گیا ہے، اسی وجہ سے ہم ڈیجیٹل میں بہت پیچھے رہ گئے ہیں۔

اُن کا کہنا تھا کہ ’ہمارےملک میں لاکھوں بچے سوشل میڈیا کے ذریعے پیسےکما رہےہیں، بندش کی وجہ سے نہ صرف نوجوان بے روزگار ہوں گے بلکہ ہمارا ملک مزید پیچھے چلا جائے گا‘۔

میاں عتیق کا کہنا تھا کہ ’ یہ کیوں یوٹیوب، ٹک ٹاک کی سروس پاکستان میں بند کرنا چاہتے ہیں، اگر پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی کو سوشل میڈیا قوانین میں تبدیلی کی ضرورت ہے تو اس کے لیے ہم تیار ہیں‘۔

سینیٹر میاں عتیق کا کہنا تھا کہ ’ہمیں غلط کام کرنے والے کو روکنا ہوگا اور ایسی چیزوں کا سدباب کرنا ہوگا، ورنہ کیا آنے والے وقتوں میں ہم کیا سب کچھ بند کر دیں گے‘۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں