اپوزيشن جماعتوں کو بھارتی سازشوں کو سمجھنا چاہيے: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ حالات سنجیدہ ہیں، اپوزیشن بھارتی سازشوں کو سمجھے۔

آج وفاقی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اپنے ایک اہم بیان میں اپوزیشن کی کوتاہیوں کی نشان دہی کرتے ہوئے کہا کہ حالات کو سنجيدگی سے سمجھنا ہوگا، اپوزيشن نے ہماری باتوں پر توجہ نہیں دی۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ میں اپوزیشن کو خطے کی صورت حال سے آگاہ کرنا چاہتا تھا اس کے برعکس اپوزيشن نے اپنی توجہ بجٹ پر مرکوز رکھی، اپوزيشن جماعتوں کو بھارتی سازشوں کو سمجھنا چاہيے، بلاول کو جو کہنا تھا وہ کہہ ليا، اپوزيشن کا کام تنقيد کرنا ہے لیکن بلاول نے قیاس آرائیوں سے کام لیا۔

ان کا کہنا تھا کہ اپوزيشن نے وزير اعظم کے اسمارٹ لاک ڈاؤن پر تنقيد کی، بلاول بھٹو کی اسمبلی میں تقرير بچپنا لگتی ہے، ن ليگ کا ايجنڈا عمران خان سے چھٹکارہ ہے، اس لیے بلاول بھٹو کی تنقيد بھی ن ليگ نے ہضم کر لی۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ آپ جانتے ہیں کچھ قوتیں پاکستان میں استحکام نہیں چاہتیں، پاکستان استحکام کی جانب بڑھتا ہے تو یہ قوتیں رخنہ ڈالنے لگتی ہیں، پاکستان کو غیر مستحکم کرنے کی کوشش کرنے والے سی پیک پر بھی انگلیاں اٹھاتے ہیں۔

شاہ محمود کا کہنا تھا کہ ہمیں مقبوضہ کشمير کی صورت حال کو سمجھنا ہوگا، بھارت دوسری طرف افغانستان میں بھی امن نہیں چاہتا کیوں کہ امن سے بھارت کی اہمیت کم ہو جائے گی، بھارت کو چين سے منہ کی کھانا پڑی، بھارت اب اپنے عوام کی توجہ پاکستان کی طرف موڑنا چاہتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں