کراچی: لاک ڈاؤن میں نرمی کے دوران ریکارڈ کاروبار

تاجر رہنماء جمیل پراچہ کا کہنا ہے کہ لاک ڈاؤن میں نرمی کے باعث کراچی میں دو روز کے دوران ریکارڈ 8 ارب روپے کا کاروبار ہوا، ان کا دعویٰ ہے کہ منگل کو حکومتی ایس او پیز پر بھی زیادہ عملدرآمد کیا گیا۔

وفاقی حکومت کے بعد سندھ حکومت نے بھی ایس او پیز پر عملدرآمد کی شرط پر صوبہ بھر میں لاک ڈاؤن میں نرمی کرتے ہوئے کاروباری مراکز کھولنے کی اجازت دی تھی۔

کاروباری مراکز کھلنے کے بعد عوام کی بڑی تعداد نے مارکیٹوں کا رخ کیا، اس دوران کہیں بھی حکومتی ایس او پیز پر عملدرآمد نظر نہیں آیا، شہر کے کئی علاقوں میں لاک ڈاؤن میں نرمی کے باعث ٹریفک جام کی صورتحال بھی رہی، شدید گرمی اور روزے کی حالت میں لوگ ٹریفک جام میں پھنسے رہے۔

کراچی کے تاجر رہنماء جمیل پراچہ کا کہنا ہے کہ لاک ڈاؤن میں نرمی ملنے کے بعد دو روز کے اندر ریکارڈ 8 ارب روپے کا کاروبا ہوا۔

ان کا دعویٰ ہے کہ لاک ڈاؤن میں نرمی کے پہلے روز کی نسبت منگل کو زيادہ کاروبار ہوا اور عوام کی جانب سے حکومتی ایس او پیز پر بھی عملدرآمد کیا گیا۔

لاک ڈاؤن میں نرمی کے بعد شہر قائد کی تقریباً تمام ہی مارکیٹوں میں عوام کا بے پناہ رش ہے، صدر، زینب مارکیٹ، حیدری، طارق روڈ اور دیگر بڑے بازاروں میں خواتین اور بچوں کی بھی بڑی تعداد شاپنگ کیلئے پہنچ رہی ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں