کورونا وائرس: ملک بھر میں مریضوں کی تعداد 30,941 ہو گئی، 8,212 افراد صحتیاب

ملک بھر میں کورونا وائرس کے مصدقہ مریضوں کی تعداد 30 ہزار 941 تک جاپہنچی جب کہ جاں بحق افراد کی تعداد 667 ہوگئی۔

نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران ملک بھر میں کورونا کے 11 ہزار 367 ٹیسٹ کیے گئے جس میں 1476 مریضوں میں کورونا کی تشخیص ہوئی جس کے بعد مریضوں کی تعداد 30 ہزار 941 تک جا پہنچی ہے۔

مریضوں کی تعداد

کورونا وائرس کے پنجاب میں 11 ہزار 568، سندھ میں 11 ہزار 480، خیبر پختونخوا میں 4 ہزار 669، بلوچستان میں 2 ہزار 17، اسلام آباد میں 679، گلگت بلتستان میں 442 اور آزاد کشمیر میں 86 افراد میں اس کی تصدیق ہوئی ہے۔ کورونا وائرس سے متاثرہ 8 ہزار 212 افراد صحت یاب ہوچکے ہیں۔

جاں بحق افراد کی تعداد

نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر کے اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مزید 28 افراد کورونا کے ہاتھوں زندگی کی بازی ہار گئے جب کہ 290 مریضوں کی حالت تشویش ناک ہے۔

اعداد و شمار کے مطابق کورونا کے سب سے زیادہ 245 مریض خیبر پختونخوا میں جاں بحق ہوئے۔ اس کے علاوہ پنجاب میں 197، سندھ میں 189، بلوچستان 26، اسلام آباد 6 اور گلگت بلتستان میں کورونا سے 4 افراد جاں بحق ہوئے ہیں۔

کراچی میں دکانداروں نے مارکیٹوں کے شٹر کھول دئیے

ملک بھر میں لاک ڈاؤن میں نرمی کے بعد کراچی میں بھی دکانداروں نے مارکیٹوں کے شٹر کھول دئیے۔ کراچی میں آئرن، ٹمبر مارکیٹ سمیت لائٹ ہاؤس نے کام دوبارہ شروع ہو گیا۔

کراچی میں ٹمبر سمیت آئرن اسٹیل مارکیٹ میں مال کی لوڈنگ بھی شروع کر دی گئی۔

وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کا بورڈ امتحانات سے متعلق بیان

وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کے سبب ملک بھر کے بورڈز کے تمام امتحانات منسوخ کردیے گئے ہیں، اس میں کسی کو کوئی مخمصہ نہیں ہونا چاہیے۔

مزید پڑھیں: ملک بھر کے بورڈز کے تمام امتحانات منسوخ کردیے گئے ہیں: وفاقی وزیر تعلیم

شفقت محمود نے کہا کہ دوبارہ امتحان دینے، نمبر بہتر کرنے، اور پرائیویٹ امتحان دینے والے طلباء کی کیٹیگریز ہیں جن کے مسئلہ حل کرنے کی ضرورت ہے اور یہ مسئلہ جمعہ تک حل ہو جائے گا۔

کورونا وائرس اور احتیاطی تدابیر:

کورونا وائرس کے خلاف یہ احتیاطی تدابیر اختیار کرنے سے اس وبا کے خلاف جنگ جیتنا آسان ہوسکتا ہے۔ صبح کا کچھ وقت دھوپ میں گزارنا چاہیے، کمروں کو بند کرکے نہ بیٹھیں بلکہ دروازہ کھڑکیاں کھول دیں اور ہلکی دھوپ کو کمروں میں آنے دیں۔ بند کمروں میں اے سی چلاکر بیٹھنے کے بجائے پنکھے کی ہوا میں بیٹھیں۔

سورج کی شعاعوں میں موجود یو وی شعاعیں وائرس کی بیرونی ساخت پر ابھرے ہوئے ہوئے پروٹین کو متاثر کرتی ہیں اور وائرس کو کمزور کردیتی ہیں۔ درجہ حرارت یا گرمی کے زیادہ ہونے سے وائرس پر کوئی اثر نہیں ہوتا لیکن یو وی شعاعوں کے زیادہ پڑنے سے وائرس کمزور ہوجاتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں