لاک ڈاؤن فیز ٹو کا آغاز، کونسا کاروبار کیسے چلے گا؟ پنجاب حکومت کی ہدایات جاری

پنجاب حکومت کی جانب سے نرمی کے بعد لاک ڈاؤن فیز ٹو کا آغاز ہو گیا ہے۔

ڈیڑھ ماہ سے جاری لاک ڈاؤن میں حکومت نے نرمی کر دی گئی ہے۔ کپڑے جوتے، چوڑیاں، زیوارات، حجام اور درزی کی دکانیں کھل گئی ہیں۔

لاک ڈاؤن کے فیز ٹو کے دوران چھوٹی مارکیٹس کو کاروبار کی اجازت دی گئی ہے۔ گارمنٹس اور جوتوں کی دوکانیں، شعبہ تعمیرات سے منسلک تمام کاروبار، الیکٹرونکس مصنوعات کے بازار، پیر سے جمعرات تک صبح آٹھ سے شام پانچ بجے تک کھلے رہیں گے۔ حجام اور جمنیزیمز کو بھی انہیں اوقات میں کھلا رہنے کی اجازت ہے۔

کاربار کھولنے سے قبل حکومتی ہدایت نامہ بھی دیا گیا ہے جس کے تحت دکاندار اپنی دوکانوں میں زیادہ رش نہ کریں، سماجی فاصلہ کے اصول پر عملدرآمد اور دوکانوں میں سینیٹائزرز کا موجود ہونا یقینی بنایا جائے۔

ایس او پیز کے تحت کاروباری مراکز میں عملہ محدود رہے گا، سارے عملے کے لیئے گلوز اور ماسکس پہننا بھی ضروری ہو گا۔

تمام گروسری اسٹورز، جنرل اسٹورز، کریانہ شاپس، بیکریز، آٹا چکی، دودھ، دہی اورگوشت کی دکانیں، سبزی و پھل منڈی، اجناس منڈی، مویشی منڈی، تندور، نان بائی اور آٹو ورکشاپس صبح نو بجے سے شام پانچ بجے تک ہفتہ کے ساتوں دن کھولنے کی اجازت ہو گی۔

حکومتی نوٹیفکیشن کے مطابق تمام بڑے شاپنگ مال، تعلیمی ادارے، ہوٹل و ریسٹورینٹ کے اندر کھانا یا قیام کرنا،شادی ہال یا مارکی، سینما و تھیٹر اور بڑے اجتماعات پر پابندی کی مدت اکتیس مئی تک بڑھا دی گئی ہے۔ پبلک ٹرانسپورٹ بھی فی الحال نہیں چلیں گی۔

خیال رہے کہ حکومت نے لاک ڈاؤن کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔ حکومت کا کہنا ہے کہ احتیاط سے ہی وائرس کے اثرات پر قابو پایاجاسکتا ہے۔ عوام کی انفرادی ذمہ داری ہے وہ خود احتیاط کریں۔ مشکل وقت سے نکلنا ہے تو ذمہ دار شہری بننا ہو گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں