وزیراعظم عمران خان کا دورہِ آزاد کشمیر، شدید برف باری سے متاثرین کو ملے گا سکھ کا سانس

وزیراعظم عمران خان آزاد کشمیر میں آج لینڈ سلائیڈنگ اور شدید برف باری سے متاثرہ علاقوں کا دورہ کریں گے اور امدادی کاموں کا جائزہ لینے کے ساتھ متاثرین سے بھی ملیں گے۔

وزیراعظم عمران خان نے برفباری اور لینڈ سلائیڈنگ سے ہونے والے نقصانات کے بعد اپنی تمام سیاسی مصروفیات ترک کر دیں، عمران خان آج آزاد کشمیر پہنچیں گے ، جہاں لینڈ سلائیڈنگ اور شدید برف باری سے متاثرہ علاقوں کا دورہ کریں گے، اس موقع پر وزیراعظم کو لینڈسلائیڈنگ سے متاثرہ علاقوں کے حوالے سے بریفنگ دی جائے گی۔

دورے کے دوران وزیر اعظم متاثرین کی امداد کیلئے کی جانے والی سرگرمیوں کا جائزہ لیں گے اور متاثرہ خاندانوں سے ملاقاتیں کریں گے ، وزیر امور کشمیر امین گنڈا پور بھی وزیر اعظم کے ہمراہ ہوں گے۔

گزشتہ روز وزیراعظم عمران خان نے کہا تھا کہ شدید برف باری اور لینڈ سلائیڈنگ آزاد جموں و کشمیر میں موت اور تباہی کا پیغام لے کر آئی۔ انہوں نے کہا کہ آزاد جموں و کشمیر کے عوام کو ہنگامی بنیادوں پر امداد کی فراہمی یقینی بنانے کے لئے نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی فوج اور تمام وفاقی وزارتوں کو ہدایات جاری کر دی ہیں۔

خیال رہے آزادکشمیر اور بلوچستان میں برفباری نے تباہی مچادی ہے، دو روز کے دوران آزاد کشمیر، گلگت بلتستان اور بلوچستان میں جاں بحق ہونے والوں کی تعداد 87 ہوگئی ہے ، برف باری سے متاثرہ علاقوں میں آپریشن جاری ہے اور پاک فوج کی ٹیمیں بھی امدادی کاموں میں مصروف ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں